.

روسی لڑاکا طیارہ سے حادثاتی طور پر باہرنکلنے کی نشستیں اچانک فعال؛تین پائیلٹ ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس کے جوہری بم لے جانے کی صلاحیت کے حامل لڑاکا طیارے سے تین پائیلٹ گر کر ہلاک ہوگئے ہیں۔اس طیارےکی کسی حادثے کی صورت میں باہر نکلنے کی نشستیں اچانک فعال ہوگئی تھیں۔

روس کی وزارت دفاع نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ واقعہ منگل کو دارالحکومت ماسکو سے جنوب مغرب میں 145 کلومیٹر دورواقع کالوگا ریجن میں ایک فوجی ائیربیس پر پیش آیا ہے۔

بیان کے مطابق طویل فاصلے تک مار کرنے والے بمبار ٹی یو-22ایم 3 کا عملہ ایک تربیتی مشن کی تیاری کررہا تھا۔اس دوران میں اس کا ایجکشن نظام (اچانک کودنے کا نظام)غیرفعال ہوگیا اور اس نے عملہ کو حادثاتی طور پر باہر پھینک دیا۔

وزارت نے کہا ہے کہ طیارہ زیادہ بلندی پر نہیں تھا،اس لیے پیراشوٹ نہیں کھل سکےاس کی وجہ سے عملہ کے تین ارکان گرکر شدید زخمی ہوگئے تھے اور وہ پھر چل بسے ہیں۔واقعے کی سرکاری تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔

ٹی یو-22ایم 3روس کا سپرسانک دوانجنوں کا طویل فاصلے تک پرواز کرنے والا بمبارہے۔یہ لڑاکا طیارہ جوہری ہتھیار لے جانے کی صلاحیت کا حامل ہے۔