.

روسی صدر کا گھوڑے پر سے اوندھے منہ گرنے کا اعتراف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس کے صدر ولادی میر پوتین کی ماضی میں ایسی تصاویر منظر عام پر آتی رہی ہیں جن میں وہ برہنہ سینے کے ساتھ گھوڑے پر سوار نظر آ رہے ہیں۔ تاہم گذشتہ روز پوتین نے اس بات کا اعتراف کیا کہ وہ ایک مرتبہ گھوڑے پر سے گر چکے ہیں۔

پوتین 20 برس سے زیادہ عرصے سے صدر یا وزیر اعظم کی صورت میں روس کے اقتدار میں ہیں۔ وہ مختلف وقتوں میں اپنی تصاویر کے ذریعے خود کو ایک طاقت ور شخص کی صورت میں پیش کرتے رہے ہیں۔

کبھی وہ منفی درجہ حرارت کے ٹھنڈے پانی میں غوطہ لگاتے نظر آتے ہیں، کبھی برہنہ سینے کے ساتھ گھوڑے کی پشت پر سوار ہوتے ہیں، کبھی جوڈو کے کھیل میں حریف کو پچھاڑتے ہیں، کبھی جنگل میں چیتوں کا شکار کر رہے ہوتے ہیں اور کبھی دریا میں تیراکی کرتے نظر آتے ہیں۔

ٹاس نیوز ایجنسی کے مطابق جمعے کے روز روسی صدر نے اس بات کا انکشاف کیا کہ گھڑ سواری کی تربیت کے دوران ایک مرتبہ رکاوٹ کے سامنے پہنچ کر اچانک ان کا گھوڑا رک گیا اور اوندھے منہ گر گیا۔ پوتین کے مطابق انہیں یاد نہیں کہ یہ واقعہ کب پیش آیا تاہم وہ اس موقع پر مکمل محفوظ شکل میں گرے تھے۔

یاد رہے کہ 2012ء میں پوتین کی کمر میں درد سے متعلق خبریں سامنے آئی تھیں۔ بعض ذرائع کے مطابق وہ اس مسئلے سے جوڈو کے کھیل کے دوران میں دوچار ہوئے۔