.

وینزویلا کی تیل کے بدلے کرونا ویکسین کی خریداری کی تجویز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اتوار کے روز وینزویلا کے صدر نکولس مادورو نے اپنی حکومت کودرپیش معاشی مشکلات کے پیش نظر "تیل کے بدلے ویکسین" کا فارمولہ تجویز کیا۔ یہ فارمولہ ایک ایسے وقت میں پیش کیا گیا ہے جب دوسری طرف وینز ویلا امریکی اور عالمی پابندیوں کی وجہ سے مشکلات سےدوچار ہے جب کہ ملک میں کرونا کی دوسری لہر بھی جاری ہے۔

انہوں نے سرکاری ٹیلی ویژن پر ایک بیان میں کہا کہ وینزویلا میں تیل کے ٹینکرز موجود ہیں اور اس کے پاس ایسے صارفین ہیں جو ہم سے تیل خریدنے کے خواہاں ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ تیل کی پیداوار کا کچھ حصہ ویکسین حاصل کرنے کے لیے مختص کریں گے۔ اس طرح ہم تیل کے بدلے میں ویکسین خریدیں گے۔

خیال رہے کہ وائٹ ہاؤس نے رواں مار چ کے آغاز میں اعلان کیا تھا کہ امریکا نے وینزویلا پر عائد پابندیوں میں مارچ 2022 تک توسیع کر دی ہے۔

صدر جوبائیڈن نے کانگریس کو اپنے ایک پیغام میں کہا کہ وینزویلا کی صورتحال سے امریکا کی قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کو غیر معمولی خطرہ لاحق ہے لہذا میں نے وینزویلا کے حوالے سے ہنگامی حالت اور پابندیوں میں توسیع کو ضروری سمجھتا ہوں۔

وینزویلا کے خلاف نام نہاد "ایمرجنسی" متعارف کروائی گئی تھی جس کا مقصد وینز ویلا پر پابندیاں عاید کرنا تھا۔