.

سابق امریکی صدر باراک اوباما کی دادی انتقال کر گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سابق امریکی صدر باراک اوباما کی سوتیلی دادی 99 برس کی عمر میں کینیا میں انتقال کرگئیں۔ باراک اوباما کے کینیا کے اہل خانہ نے ان کی دادی کے انتقال کی تصدیق کردی ہے۔ خاندانی ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق امریکی صدر کی سوتیلی دادای سارہ اوباما کا انتقال کینیا کے شہر کسومو کے ایک اسپتال میں مقامی وقت کے مطابق منگل کی صبح 4 بجے ہوا۔

سابق امریکی صدر کی سوتیلی دادی جنہیں پیار سے ماما سارہ کہا جاتا تھا نے کینیا کے کوجیلو گاؤں میں لڑکیوں اور یتیم بچوں کی تعلیم کے فروغ میں کلیدی کردار ادا کیا تھا۔ سارہ اوباما کی بیٹی مارسیت اونیانگو اور خاندان کے ترجمان موسیٰ اسماعیل نے کہا کہ اس حوالے سے باراک اوباما کو آگاہ کر دیا گیا ہے اور انہوں نے تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

اگرچہ 99 سالہ ’ماما‘ سارہ کے ساتھ اوباما کا کوئی خونی رشتہ نہیں تھا لیکن وہ اُنہیں اپنی ’دادی‘ کہہ کر ہی بلاتے تھے اور پہلے بھی اُن کے ساتھ کئی بار ملاقات کر چکے تھے۔

سارہ اوباما صدر اوباما کے دادا کی دوسری بیوی تھیں اور انہوں نے ان کے والد باراک اوباما سینئر کی پرورش میں مدد کی تھی۔ اوباما خاندان کا تعلق کینیا کے لیو نسلی گروہ سے ہے۔ صدر اوباما اکثر اپنی سوتیلی دادی سے پیار کا اظہار کرتے تھے اور انہوں نے اپنی یادداشت میں انہیں ‘گرینی’ کے نام سے مخاطب کیا ہے۔

خیال رہے کہ سال 2015 میں اپنے والد کے آبائی ملک کینیا کے دورے کے دوراناوباما نےاپنے رشتے داروں کے ساتھ ملاقاتیں کی تھیں۔ ان رشتے داروں میں اوباما کی ایک سوتیلی بہن آؤما اور اُن کی سوتیلی دادی ’ماما‘ سارہ بھی شامل تھیں۔ سارہ اوباما نے 2009 میں اوباما کی جانب سے صدر کی حلف برداری کی تقریب میں بھی شرکت کی تھی۔ سال 2014 میں اوباما نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے خطاب میں بھی ماما سارہ کا ذکر کیا تھا۔