.

عرب اتحاد نے مآرب میں حوثیوں کا بیلسٹک میزائل سے حملہ ناکام بنا دیا 

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد نے ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کا یمن کے شمالی شہر مآرب پر بیلسٹک میزائل سے حملہ ناکام بنا دیا ہے۔اس حملے میں شہریوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی۔

عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’مآرب میں حوثی ملیشیا کی فوجی کارروائی سے لاکھوں شہریوں کی زندگیاں خطرے سے دوچار ہوچکی ہیں۔‘‘

انھوں نے مزید بتایا ہے کہ حوثیوں کا میزائل حملوں کے لیے استعمال ہونے والا ایک لانچ پیڈ بھی تباہ کردیا گیا ہے۔

حوثیوں نے منگل کے روز بھی مآرب میں بیلسٹک میزائل سے حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں ایک شہری ہلاک اور چھے زخمی ہوگئے تھے۔یہ بیلسٹک میزائل شہری علاقے کے وسط میں گرا تھا۔

یمنی وزیراطلاعات معمرالاریانی کا کہنا ہے کہ حوثیوں نے مآرب کے شہری علاقوں میں حملے جاری رکھے ہوئے ہیں۔ان کی فوجی کارروائی میں شدت کے بعد لاکھوں بچّوں اور بے گھرخاندانوں کی زندگیاں خطرے سے دوچار ہوگئی ہیں۔

مآرب میں یمن کی بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ حکومت کے تحت فورسز اور حوثیوں کے درمیان لڑائی میں حالیہ دنوں میں شدت آئی ہے۔مآرب یمن کے شمال میں واقع واحد صوبہ ہے جس پرسرکاری فورسز کا کنٹرول ہے۔اسی صوبہ میں یمن کا تیل کا سب سے بڑا انفرااسٹرکچر موجود ہے۔باقی شمالی صوبوں پر حوثیوں نے قبضہ کررکھا ہے۔

اسی ہفتے اقوام متحدہ کے ماہرین کی ایک ٹیم نے اپنی تحقیقاتی رپورٹ میں حوثیوں کو 30 دسمبر کو عدن کے ہوائی اڈے پر تباہ کن حملے کا ذمے دار قرار دیا تھا۔یمنی حکومت کے ارکان کی آمد کے وقت بم اور میزائل حملے میں 22 افراد ہلاک ہوگئے تھے لیکن تب حوثیوں نے اس حملے میں ملوّث ہونے کی تردید کی تھی۔