.

جدہ: اسقاطِ حمل کی ممنوعہ ادویہ فروخت کرنے والا اتائی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے ساحلی شہر جدہ میں پولیس نے ایک غیرملکی جعلی ڈاکٹر کو گرفتار کرلیا ہے۔ یہ گرفتاری اسقاط حمل کی ممنوعہ ادویہ کی فروخت کی شکایت کے بعد عمل میں لائی گئی ہے۔

تفصیل کے مطابق جعلی اور ممنوعہ ادویہ فروخت کرنے کی شکایت پر پولیس نے جدہ میں ایک اپارٹمنٹ پر چھاپہ مارا اور وہاں سے اس اتائی کو ممنوعہ ادویہ سمیت گرفتار کر لیا ہے۔وہ اپنے فلیٹ کو ایک کلینیک کے طور پر استعمال کررہا تھا۔

جدہ میں محکمہ صحت کے حکام نے اب گرفتار اتائی کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی ہے۔ فلیٹ میں مریضوں کے لیے تیار کیے گئے تین بستر، بلند فشار خون اور ذیابطیس چیک کرنے کے آلات، خالی انجیکشن اور بڑی مقدار میں ادویہ قبضے میں لی گئی ہیں۔ اتائی نہ صرف اسقاط حمل کی ادویہ فروخت کر رہا تھا بلکہ وہ داغ دھبوں کے علاج کا دعویٰ کرتا تھا۔

اس غیر ملکی اتائی کے فلیٹ میں دو مریض بھی موجود تھے اور وہ ان کا علاج کررہا تھا۔ گرفتاری کے وقت اس نےاسٹیتھوسکوپ پہنی ہوئی تھی۔اس کے خلاف قانون برائے ہیلتھ پریکٹس کی دفعہ 28 کی صریح خلاف ورزی کے الزام میں کارروائی شروع کردی گئی ہے۔