.

ناسا نے سعودی عرب کے شمال مغربی ساحلی جزائر کی تصاویر جاری کر دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بین الاقوامی خلائی تحقیقاتی ادارے "ناسا" کے مہم 64 میں شامل عملے کے ایک خلاباز نے سعودی عرب میں شمال مغربی ساحل کے قریب واقع جزائر کی متعدد تصاویر اتار کر انہیں عوام الناس کے لیے پیش کر دیا گیا ہے۔ مملکت کے شمال مغربی ساحل پر سیکڑوں کی تعداد میں جزیرے واقع ہیں جن میں بحیرہ احمر پروجیکٹ کے نوے جزائر شامل ہیں۔

اس موضوع پر تبصرہ کرتے ہوئے بحیرہ احمر کی ترقیاتی کمپنی کے 'سی ای او' جان پاگانو نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ فطرت سب سے قیمتی چیز ہے جو ہمارے پاس ہے اور ہمارا الہامی ذریعہ ہے۔ ہم ان فطری اور قدرتی مقامات سے بے مثال قابل تجدید سیاحت کے وسائل پیدا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ ہم مستقبل قریب کی تعمیر کے لیے پائیدار اور ماحول دوست سیاحتی پروگرامات کو آگے بڑھا رہے ہیں۔ہماری کوشش ہے کہ ترقیاتی اور تعمیراتی منصوبوں کے نتیجے میں ہمارے فطری ماحول پر مرتب ہونے والے منفی اثرات کو کم سے کم کیا جا سکے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مثال کے طور پر بحر احمر کے منصوبے میں ماحولیاتی نظام پر تعمیراتی کارروائیوں کے اثرات میں کمی کو یقینی بنانے کے لئے جدید ٹکنالوجی کا استعمال کیا گیا ہے۔ اس منصوبے میں ہوٹلوں کی تعمیر اس انداز سے کی جا رہی ہے کہ اس سے قدرتی ماحول اور مرجانی چٹانیں متاثر نہ ہوں۔