.

ایران کی القدس فورس کے ڈپٹی کمانڈر محمد حجازی چل بسے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کی بیرون ملک فوجی کارروائیوں کی ذمے دار القدس فورس کے ڈپٹی کمانڈر بریگیڈئیر جنرل محمد حجازی چل بسے ہیں۔

ایران کی سپاہِ پاسداران انقلاب (آئی آر جی سی )نے اتوار کو ایک بیان میں ان کی وفات کی اطلاع دی ہے اور بتایا ہے کہ وہ دل کے عارضے میں مبتلا تھے اور اسی سے ان کی موت واقع ہوئی ہے لیکن اس نے مزید تفصیل نہیں بتائی۔

مرحوم حجازی کو جنوری 2020ء میں القدس فورس کے کمانڈر میجرجنرل قاسم سلیمانی کی عراق کے دارالحکومت بغداد پر امریکا کے ایک میزائل حملے میں ہلاکت کے بعد ڈپٹی کمانڈر مقرر کیا گیا تھا۔

وہ 1956ء میں اصفہان شہر میں پیدا ہوئے تھے۔انھوں نے 1979ء میں سپاہِ پاسداران انقلاب میں شمولیت اختیار کی تھی اور 10 سال سے زیادہ عرصے تک اس سپاہ کے تحت باسیج ملیشیا کے سربراہ رہے تھے۔2008ء میں انھیں آئی آر جی سی کا ڈپٹی کمانڈر مقرر کیا گیا تھا۔

وہ تہران میں آئی آر جی سی کی ثاراللہ بیس کے 2009ء میں کمانڈر رہے تھے۔اسی فوجی اڈے کو ایرانی دارالحکومت میں احتجاجی مظاہروں پر قابو پانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔اس اڈے سے تعلق رکھنے والی باسیج ملیشیا اور دوسری فورسز نے اسی سال ایران میں منعقدہ متنازع صدارتی انتخابات کے خلاف احتجاجی مظاہروں کو کچلنے میں اہم کردارادا کیا تھا۔

یورپی یونین کی کونسل نے اکتوبر2011ء میں محمد حجازی پر بعد از انتخابات احتجاجی مظاہرین کے خلاف کریک ڈاؤن میں مرکزی کردار ادا کرنے پر پابندیاں عاید کردی تھیں۔