.

یو اے ای: کووِڈ-19 ویکسین کی 98 لاکھ سے زیادہ خوراکیں لگائی جاچکیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں گذشتہ 24 گھنٹے میں کووِڈ-19 ویکسین کی 111779 خوراکیں لگائی گئی ہیں۔

یواے ای کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام کے مطابق اب تک ملک میں 9601463 خوراکیں لگائی جاچکی ہیں۔اس طرح یو اے ای میں ویکسین لگانے کی شرح 100 میں سے 97۰08 ہے۔

وام نے بیان میں کہا ہے کہ وزارت صحت کے منصوبےکے تحت معاشرے کے تمام ارکان کو کووِڈ-19 کی ویکسین لگائی جارہی ہے تاکہ ویکسی نیشن کے نتیجے میں مطلوبہ قوت مدافعت حاصل کی جاسکے اور یومیہ کیسوں کی بڑھتی ہوئی تعداد پر قابو پایا جاسکے۔

قبل ازیں گذشتہ روز امارت دبئی نے کووِڈ-19 کی ایم آر این اے ویکسین لگانے کا دائرہ کار بڑھا دیا ہے اور اب یہ ویکسین بچّوں کو دودھ پلانے والی خواتین اور مستقبل میں اُمید سے ہونے والی خواتین کو بھی لگانے کی اجازت دے دی ہے۔

لطیفہ اسپتال برائے خواتین اوراطفال کی چیف ایگزیکٹوآفیسر( سی ای او) ڈاکٹر مونا تہلک نے ایک بیان میں کلینکی مطالعات کے حوالے سے بتایا ہے کہ ’’ایم آر این اے ویکسین بچّوں کو چھاتی کا دودھ پلانے والی خواتین اور امید سے ہونے والی خواتین کے لیے محفوظ ہے،الاّ یہ کہ کوئی مریضہ بعض دیگرعوارض کا شکار ہو۔‘‘

انھوں نے کہا کہ’’بچّوں کو اپنا دودھ پلانے والی مائیں دبئی ہیلتھ اتھارٹی (ڈی ایچ اے) کی نئی رہ نما ہدایات کے مطابق اب فائزر اور بائیو این ٹیک کی تیارکردہ ایم آراین اے ویکسین لگوا سکتی ہیں۔انھیں ویکسین لگوانے سے پہلے یا بعد میں بچوں کو دودھ چھڑوانے کی ضرورت نہیں۔‘‘

دبئی کے میڈیا دفتر نے کہا ہے کہ کووِڈ-19 کا شکار ہونے والے مریض اگر تنہائی کا عرصہ مکمل کرچکے ہیں تو انھیں اب ویکسین لگوانے کے لیے تین ماہ تک انتظار کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی ۔وہ اپنا تنہائی کا عرصہ مکمل ہونے کے بعد ویکسین لگوا سکتے ہیں،البتہ اس کی شرط یہ ہے کہ وہ کرونا وائرس سے ہلکے متاثر ہوئے ہوں اور ان میں معمولی علامات ظاہر ہوئی ہوں۔