.

بحرین کی گلف ائیرکا 3جون سے تل ابیب کے لیے پہلی پرواز چلانے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بحرین کی قومی فضائی کمپنی گلف ائیرنے 3 جون سے اسرائیل کے شہر تل ابیب کے لیے اپنی پہلی براہ راست پرواز چلانے کا اعلان کیا ہے اور اس کی نشستوں کی بُکنگ شروع کردی ہے۔

بحرین کے مرکز برائے شہری ہوابازی کی ویب سائٹ کے مطابق گلف ائیرہفتے میں منامہ اور تل ابیب کے درمیان دو پروازیں چلائے گی اور اس روٹ پر اے 320 طیارے چلائے گی۔

گلف ائیر سے قبل متحدہ عرب امارات کی دو فضائی کمپنیاں فلائی دبئی اور اتحاد تل ابیب کے لیے اپنی پروازیں چلا رہی ہیں۔انھوں نے گذشتہ سال اسرائیل اور یو اے ای کے درمیان امن معاہدہ طے پانے کے بعد پروازیں شروع کی تھیں۔

بحرینی حکام کے گذشتہ سال نومبر میں اسرائیل کے سرکاری دورے کے بعد دونوں ملکوں نے اپنے اپنے سفارت خانے کھولنے،آن لائن ویزا سسٹم شروع کرنے اور ہفتہ وار پروازیں چلانے سے اتفاق کیا تھا۔

بحرین اور اسرائیل نے اکتوبر 2020ء میں مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعلقات کے فروغ کے لیے مفاہمت کی یادداشتوں اور مشترکہ اعلامیے پر دست خط کیے تھے۔تب اسرائیل اور امریکا کے اعلیٰ سطح کے وفد نے منامہ کا دورہ کیا تھا اوربحرینی حکام سے مختلف امور پر بات چیت کی تھی۔

واضح رہے کہ اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو نے 15 ستمبر2020ء کووائٹ ہاؤس میں بحرینی وزیرخارجہ عبداللطیف الزیانی کے ساتھ اس معاہدۂ ابراہیم پر دست خط کیے تھے۔

اسرائیلی وزیراعظم نے بحرین کے علاوہ متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ شیخ عبداللہ بن زاید کے ساتھ الگ سے معاہدے پر دست خط کیے تھے۔ان دونوں ممالک کے بعد سوڈان اور مراکش نے بھی اسرائیل کے ساتھ معمول کے سفارتی تعلقات استوار کرنے کا اعلان کیا تھا۔