عراق : ترکی کے جنگی طیاروں کی کرد دیہات پر بم باری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

عراق میں کرد ذرائع نے اس اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ترکی کے جنگی طیاروں نے اتوار اور پیر کی درمیانی شب العمادیہ ضلع میں کرد دیہات کو بم باری کا نشانہ بنایا۔

ذرائع کے مطابق ترکی کی فضائیہ کے طیاروں نے 7 دیہات پر بم باری کرتے ہوئے کردستان ورکرز پارٹی کے ٹھکانوں پر حملہ کیا۔

ابھی تک ان حملوں کے نتیجے میں ہونے والے نقصان کا معلوم نہیں ہو سکا۔

اس سے قبل جمعرات کے روز ترکی کی وزارت دفاع نے کہا تھا کہ شمالی عراق میں ترکی کے ایک فوجی اڈے کو راکٹ حملے سے نشانہ بنایا گیا۔ اس کے نتیجے میں ایک ترک فوجی ہلاک اور نزدیکی گاؤں میں ایک بچہ زخمی ہو گیا۔

وزارت دفاع کے بیان میں بتایا گیا کہ بعشیقہ کے علاقے میں واقع فوجی اڈے پر بدھ کی شب تین راکٹ داغے گئے تھے۔ ان میں ایک راکٹ اڈے پر اور بقیہ دو نزدیک واقع ایک گاؤں میں گرے۔

ترکی کی فوج کالعدم تنظیم 'کردستان ورکرز پارٹی' کے مسلح عناصر کے خلاف لڑائی میں مصروف ہے۔ تنظیم کے شمالی عراق میں مراکز موجود ہیں۔

ترکی ، امریکا اور یورپی یونین اس تنظیم کو دہشت گرد جماعت کا درجہ دے چکے ہیں۔ یہ تنظیم 1984ء سے ترکی کے خلاف مسلح بغاوت میں مصروف ہے۔ اس تنازع میں اب تک ہزاروں افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں