عسیر : خود کو نقصان پہنچانے کے لیے دوائیں کھا لینے والی لڑکی سے متعلق تفصیلات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں عسیر صوبے کی انتظامیہ نے جمعے کی شام اس لڑکی کے معاملے کی تفصیلات واضح کی ہیں جس نے خود کو نقصان پہنچانے کے لیے دوائیں کھا لی تھیں۔

سوشل میڈیا پر زیر گردش معاملے کے مطابق عسیر کے ایک ضلع میں سکونت پذیر مذکورہ 26 سالہ سعودی لڑکی نے گھریلو اختلافات کے سبب بڑی مقدار میں اپنی والدہ کے زیر استعمال دوائیں کھا لیں۔

عسیر کی انتظامیہ نے صوبائی پولیس کے حوالے سے بتایا ہے کہ ضلع کے ایک ہسپتال میں جمعرات کو علی الصبح ایک لڑکی کو لایا گیا جس نے بڑی مقدار میں دوائیں کھا لی تھیں۔ فوری طبی مداخلت اور ضروری اقدامات کی بدولت لڑکی کی حالت بہتر ہو گئی۔ اسے ابھی طبی نگرانی کے شعبے میں رکھا گیا ہے۔

لڑکی کے بیان کے مطابق اس کے بھایوں نے مجبور کیا تھا کہ وہ میراث کی تقسیم کے کاغذات پر دستخط کر دے۔ اس بیان کی بنیاد پر لڑکی کے تینوں بھائیوں کو طلب کر لیا گیا۔ ان میں سے ایک بھائی ضلع سے فرار ہو گیا۔ اس کو حراست میں لینے کے لیے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔

عسیر صوبے کی انتظامیہ نے باور کرایا ہے کہ وہ اس لڑکی کے معاملے پر پوری توجہ دے رہی ہے اور ہر حق دار کو اس کا حق دیا جائے گا۔ انتظامیہ نے مزید کہا کہ صوبے میں کسی بھی شہری یا غیر ملکی مقیم کے حقوق کی تلفی کی صورت میں انتظامیہ یا متعلقہ سیکورٹی اداروں سے رابطہ کیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں