.

یمنی فوج کی مآرب اوردوسرے محاذوں پرحوثیوں کے خلاف لڑائی میں پیش قدمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی فوج نے ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کے خلاف چھے گورنریوں میں جاری لڑائی میں پیش قدمی کی اطلاع دی ہے اور بتایاہے کہ اس نے حوثیوں کوبھاری جانی نقصان پہنچایا ہے اور انھیں بعض محاذوں سے پسپا کردیا ہے۔

سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) نے اتوار کو یمنی فوج کے ترجمان کے حوالے سے بتایا ہے کہ سرکاری فوج نے مآرب،تعز ، حجہ ، الضالع ،البیضاء اور الحدیدہ میں حوثیوں کے مقابلے میں پیش قدمی جاری رکھی ہوئی ہے اور حوثی ملیشیا کو مسلسل جانی اور مالی نقصان کا سامنا ہے۔

ترجمان نے بتایا کہ حالیہ لڑائی میں حوثی ملیشیا کے سیکڑوں جنگجو ہلاک اور زخمی ہوگئے ہیں۔انھیں مآرب میں سرواح ، کسرہ ، حیلان، المشجع ،المخدرہ اور الجدعان کے محاذوں پر کافی نقصان پہنچایا گیا ہے۔

یمن کے جنوب مغرب میں واقع گورنری تعز میں بھی حوثیوں کے خلاف فوجی کارروائیاں جاری ہیں۔فوج نے حوثی ملیشیا کے متعدد رسدی راستوں کو منقطع کردیا اور بہت سی جگہوں کا دوبارہ کنٹرول حاصل کر لیا ہے۔

یمنی فوج کے ترجمان نے ایک پریس بریفنگ میں کہا کہ ’’یمن کے شمال میں واقع گورنری حجہ میں مسلح افواج نے حوثیوں کے خلاف اپنے حملے جاری رکھے ہوئے ہیں۔ الجوف میں فوج نے حوثی ملیشیا کی جارحانہ کارروائیوں کے ردعمل میں جوابی حملہ کیا اور اس کو دو محاذوں سے پسپا کردیا ہے۔

دریں اثناء سعودی عرب کے فضائی دفاعی نظام نے حوثیوں کے بارود سے لدے ایک اور ڈرون کو بروقت روک کر تباہ کردیا ہے۔عرب اتحاد کے ترجمان کے مطابق حوثیوں نے یہ ڈرون سعودی عرب کے جنوبی علاقے کی جانب داغا تھا۔اس واقعہ سے دوروز قبل بھی حوثیوں نے بارود سے لدے تین ڈرون سعودی عرب کی جانب داغے تھے مگر عرب اتحاد نے انھیں فضا ہی میں ناکارہ بنا دیا تھا۔ان سے سعودی عرب کے جنوبی شہروں خمیس مشیط اور جازان کو نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی۔