.

کابل: امریکی سفارت خانے کے عملے کو ملک چھوڑنے کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی حکومت نے افغانستان میں موجود اپنے سرکاری ملازمین کو ہدایات جاری کی ہیں کہ وہ اگر اپنی ذمہ داریاں کسی دوسرے ملک میں انجام دے سکتے ہیں تو وہ افغانستان سے نکل جائیں۔

امریکی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں افغانستان کے حوالے سے سفری ہدایات میں بتایا گیا ہے کہ امریکی حکومت کے ایسے ملازمین جو کہ اپنی ذمہ داریاں بیرون ملک سے انجام دے سکتے ہیں ان کے لئے ہدایت ہے کہ وہ افغانستان سے کو چ کر جائیں۔

امریکا نے عام شہریوں کے لئے درجہ چہارم کی سفری ایڈوائزری جاری کر رکھی ہے جس کے تحت افغانستان میں کسی بھی قسم کے سفر کی ممانعت کی گئی ہے۔ یاد رہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن نے حال ہی میں تمام امریکی افواج کو ستمبر تک افغانستان سے نکال لینے کا اعلان کیا تھا۔

امریکی وزارت خارجہ نے تمام امریکی شہریوں پر زور دیا ہے کہ وہ جلد از جلد کمرشل پروازوں کے ذریعے سے افغانستان چھوڑ دیں۔

امریکی فوجی حکام نے خبردار کیا ہے کہ افغانستان سے افواج کی مکمل واپسی کے نتیجے میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کے عزائم کو پانے میں مشکلات بڑھ جائیں گی۔