.
سعودی معیشت

چینی سرمایہ کاروں کی آرامکو کے حصص خریدنے کی خواہش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

چین سے تعلق رکھنے والے بڑے سرمایہ کاروں نے سعودی عرب کی سرکاری آئل کمپنی آرامکو میں سرمایہ کاری کے ذریعے سے شراکت کے حصول میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔

بین الاقوامی خبررساں ایجنسی رائیٹرز نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ آرامکو کی جانب سے کمپنی کے حصص فروخت کی پیشکش کے بعد چینی سرمایہ کاروں نے دلچسپی کا اظہار کرتے ہوئے سعودی حکام سے رابطہ کیا ہے۔

اس سے قبل سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے ایک انٹرویو میں بتایا تھا کہ آرامکو دنیا کی ایک بڑی توانائی کمپنی کے ساتھ 1 فیصد حصص کی فروخت کے لئے مذاکرات کر رہی ہے اور آئندہ ایک یا دو سال میں مزید حصص بھی بین الاقوامی سرمایہ کاروں کو فروخت کے لئے پیش کئے جاسکتے ہیں۔

آرامکو کی موجودہ مارکیٹ ویلیو کے مطابق اس کے ایک فیصد حصص کی مالیت 19 ارب ڈالر ہے۔

خبررساں ایجنسی کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ آرامکو میں سرمایہ کاری میں دلچسپی دکھانے والوں میں چین کا خودمختار فنڈ چائنہ انویسٹمنٹ کارپوریشن بھی شامل ہے۔ اس کے علاوہ ایک ذرائع نے بتایا ہے کہ چین کی قومی آئل کمپنیاں بھی آرامکو میں سرمایہ کاری کی خواہش رکھتی ہیں۔

قبل ازیں شہزادہ محمد نے ایک انٹرویو میں بتایا تھا کہ ریاض چین، بھارت اور روس کے ساتھ اپنے تعلقات کو مضبوط بنانے کے لئے کوشاں ہے۔ امریکا کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ بائیڈن انتظامیہ سے کچھ اختلافات کے باوجود امریکا سعودی عرب کا تزویراتی پارٹنر ہے۔