.

اسرائیلی فوج کی غزہ میں زمینی کارروائی کی تیاری،9 ہزار ریزرو فوج طلب

شمالی اسرائیل پر جنوبی لبنان سے راکٹ حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایک ایسے وقت میں جب اسرائیلی فوج نے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں فوج داخل کرنے اور بری کارروائی شروع کرنے کا عندیہ دیا ہے ملک کے شمال میں راکٹ حملے کیے گئے ہیں۔ یہ راکٹ جنوبی لبنان کے علاقے القلیلہ سے داغ گئے ہیں۔ دوسری طرف اسرائیل نے غزہ کی پٹی میں زمینی کارروائی کے لیے 9 ہزار ریزرو فوجیوں کو ڈیوٹی پر طلب کر لیا ہے۔

ذرائع ابلاغ سےملنے والی خبروں میں بتایا گیا ہے کہ جنوبی لبنان سے اسرائیل کے بالائی علاقے الجلیل پر تین راکٹ داغے گئے جو الجلیل کی شلومی کالونی میں جا گرے۔

یہ راکٹ گراڈ نوعیت کے ہیں تاہم ان کےنتیجےمیں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

دوسری طرف اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں کہا ہےکہ وہ لبنان کی سرزمین سے اسرائیل پر راکٹ حملوں کی تحقیقات کررہی ہے۔ اسرائیلی ذرائع ابلاغ کے مطابق جنوبی لبنان سے داغے گئے تین راکٹ اسرائیل میں ایک ویران علاقے میں گرے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان افیحائی ادرعی نے 'ٹویٹر' پر بتایا کہ لبنان کی سرزمین سے تین راکٹ الجلیل کےساحلی علاقے میں داغے گئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ان راکٹ حملوں پر خطرے کے سائرن نہیں بجائے جا سکے۔

اسرائیلی ذرائع کے مطابق جنوبی لبنان سے راکٹ حملوں کا کوئی جواب نہیں دیا گیا۔

ادھر جمعرات کو لبنانی ذرائع ابلاغ نے بتایا کہ جنوبی لبنان سے اسرائیل پر راکٹ حملے فلسطینی تنظیموں کی طرف سے کیےگئے ہیں۔

یہ پیش رفت ایک ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب دوسری طرف اسرائیلی فوج نے غزہ میں حماس کے ہیڈ کواٹر کو بمباری سے تباہ کر دیا ہے۔ بمباری میں حماس کے بمبار ڈرون یونٹ کے انچارج سامر ابو دقہ کی رہائش گاہ کو بھی نشانہ بنایا ہے۔

اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی میں فوج داخل کرنے اور زمین آپریشن شروع کرنے کی تیاری کی ہے۔اب تک فضائی حملوں میں 103 فلسطینی شہید اور 580 زخمی ہوچکے ہیں۔