.

اسرائیل اور رام اللہ کے دورے سے قبل برطانوی وزیر خارجہ کا دو ریاستی حل پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانوی وزیر خارجہ ڈومینک راب آج بدھ کے روز اسرائیل اور فلسطینی اراضی کا دورہ کریں گے۔ انہوں نے اپنے دورے سے قبل اس بات پر زور دیا کہ "تشدد کی لہر" ختم کر کے دو ریاستوں کی بنیاد پر قائم حل کی جانب واپس آیا جائے۔

راب کے مطابق حالیہ واقعات اس بات کو ظاہر کرتے ہیں کہ اسرائیلیوں اور فلسطینیوں کی جانب سے زیادہ مثبت مستقبل کی سمت حقیقی پیش رفت کو یقینی بنانے کی شدید ضرورت ہے۔ ساتھ ہی تشدد کا حلقہ توڑا جانا چاہیے جس نے بہت سے لوگوں کی جانیں لے لیں۔

ڈومینک راب نے باور کرایا کہ مملکت متحدہ دو ریاستی حل کو مستقل امن کے واسطے بہترین راستہ شمار کرتی ہے اور اس کی بھرپور حمایت کرتی ہے۔

برطانوی وزارت خارجہ کے مطابق ڈومینک راب اپنے ایک روزہ دورے میں بیت المقدس میں اسرائیلی وزیر اعظم بنیامین نیتن یاہو اور رام اللہ میں فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمود عباس سے ملاقات کریں گے۔ اس دوران میں دونوں حکومتوں کے سینئر عہدے داران بھی موجود ہوں گے۔

اس سے قبل امریکی وزیر خارجہ اینٹنی بلنکن اپنے مشرق وسطی کے دورے میں منگل کے اس عزم کا اظہار کر چکے ہیں کہ بیت المقدس میں قونصل خانہ دوبارہ کھولے جانے اور غزہ کی پٹی کے لیے مالی امداد فراہم کرنے کے ذریعے فلسطینیوں کے ساتھ دوبارہ سے تعلقات قائم کیے جائیں گے۔