.

یمن: الحدیدہ کی بندرگاہ پر مال بردار جہاز الٹنے سے ایک کارکن ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی الحدیدہ میں واقع بندرگاہ پر ایک چھوٹا مال بردار جہازالٹنے سے ایک کارکن ہلاک ہوگیا ہے۔واقعے کے وقت جہاز سے سامان اتارا جارہا تھا۔

یمنی حکام نے اپنی شناخت ظاہرنہ کرنے کی شرط پر بتایا ہے کہ جہاز اقوام متحدہ کے ادارہ خوراک کا ملکیتی ہے اور اس پر اسی کا لداہوا سامان اتارا جارہا تھا۔فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ جہازکو کیوں حادثہ پیش آیا ہے۔البتہ حکام کا کہنا ہے کہ جہاز بہت پرانا تھا۔

واضح رہے کہ بیرونی دنیا سے یمن میں تجارتی اشیاء اور انسانی امداد کی مد میں آنے والا قریباً 70فی صد سامان الحدیدہ کی بندرگاہ کے ذریعے ہی پہنچتا ہے۔عالمی خوراک پروگرام نے فوری طورپر اس واقعہ کے بارے میں کوئی بیان جاری نہیں کیا۔

اس وقت عرب دنیا کے سب سے غریب ملک کو عالمی خوراک پروگرام کے تحت امدادی خوراک مہیا کی جارہی ہے۔اقوام متحدہ نے خبردار کیا ہے کہ یمن کی ایک کروڑ 60 لاکھ یاکم سے کم نصف آبادی کو خوراک کے عدم تحفظ کا سامنا ہوسکتا ہے۔اس کے لاکھوں عوام پہلے ہی جنگ اور غربت کی وجہ سے قحط ایسی صورت حال سے دوچار ہیں۔