.

مصر میں ایک امام مسجد دن دیہاڑے قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر میں الدقھلیہ گورنری کے نواحی علاقے الصلاحات میں ایک مقامی امام مسجد کو ایک شخص نے چاقو کے وار کرکے قتل کرڈالا۔

مقامی ذرائع ابلاغ نے پولیس کے حوالے سے بتایا ہے کہ قاتل المنصورہ شہر میں قائم انجینیرنگ کالج کا ایک طالب علم ہے۔ پولیس نے اسے گرفتار کرلیا ہے۔

تفصیلا ت کے مطابق مقتول عالم دین الشیخ ولید عمر عزالدین کے قتل کے وقت ایک شخص نے اپنے موبائل فون کے کیمرے میں اس وقعے کی ویڈیو بنائی جس کی مدد سے قاتل کی شناخت ممکن ہوئی ہے۔ ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ امام مسجد کو ایک شخص چاقو کے وار کرکے زمین پر گرا دیتا ہے جس کے نتیجے میں ان کی موت واقع ہو جاتی ہے۔

پولیس کے مطابق یہ واقعہ خاندانی ناچاقی کا شاخسانہ ہے جس میں 53 سالہ امام مسجد کو موت کےگھاٹ اتاردیا گیا۔

پولیس کے مطابق مقتول امام مسجد کی ہمشیرہ کی شادی ان کے قاتل کی بھائی کے ساتھ ہوئی تھی جس نے اسےدو سال قبل طلاق دے دی تھی۔ طلاق اولاد نہ ہونے پردی گئی۔ اس کے بد دونوں خاندانوں میں رنجش شروع ہوئی جو دشمنی میں بدل گئی۔ ملزم کا کہنا ہے کہ مقتول امام مسجد نے اسے گالیاں دی تھیں جس پر وہ طیش میں آگیا اور ان پر چاقو سے حملہ کرکے انہیں قتل کرڈالا۔