.

سعودی فضائیہ نے حوثی ملیشیا کا خمیس مشیط کی جانب آنے والا ڈرون مارگرایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فضائی دفاع ی نظام نے یمن سے حوثی ملیشیا کے چھوڑے گئے ایک مسلح ڈرون کو تباہ کردیا ہے۔حوثی ملیشیا نے بارود سے لدے اس ڈرون سے جنوبی شہر خمیس مشیط کو نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی۔

عرب فوجی اتحاد نے کہا ہے کہ وہ اس طرح کے حملوں سے شہریوں کو بچانے کے لیے آپریشنل اقدامات کررہا ہے۔

یمن سے ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں نے اتوار کوسعودی عرب کے جنوبی صوبہ عسیر میں ایک اسکول پر ڈرون حملہ کیا تھا۔سعودی عرب کے محکمہ شہری دفاع نے بتایا تھاکہ ڈرون اسکول کی عمارت پرگرا تھااور اس سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا تھا۔متحدہ عرب امارات نے حوثی ملیشیا کے اس ڈرون حملے کی مذمت کی ہے۔

حوثی ملیشیا نے حالیہ مہینوں کے دوران میں یمن کے شمالی علاقوں سے سعودی عرب کے جنوبی شہروں کی جانب متعدد ڈرون اور میزائل داغے ہیں۔سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد ان ڈرون حملوں سے شہریوں اور شہری ڈھانچے کو بچانے کے لیے تمام ضروری اقدامات کررہا ہے۔

عرب اتحاد کا کہنا ہے کہ’’دہشت گرد حوثی ملیشیا اور اس کے پس پشت قوتوں نے شہریوں اور شہری اہداف کو نشانہ بنانے کے لیے جرائم کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔ دہشت گردی کی یہ کوششیں بین الاقوامی انسانی قانون کی ننگی خلاف ورزی اور انسانی اقدار کے صریحاً منافی ہیں۔‘‘