.

ذیابیطس نے دنیا کے سب سے بڑے گھرانے کے سربراہ کی زندگی کا چراغ گل کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دنیا میں سب سے بڑا گھرانہ رکھنے کے حوالے سے شہرت پانے والا بھارتی شہری 'زیونا چنا' 76 برس کی عمر میں انتقال کر گیا۔ اس نے پسماندگان میں 38 بیویاں، 89 بچے اور 33 پوتے پوتیاں اور نواسے نواسیاں چھوڑی ہیں۔

ذیابیطس اور بلند فشار خون میں مبتلا زیونا چنا اتوار کے روز بھارتی ریاست میزورام کے ایک ہسپتال میں فوت ہوا۔ وہ بھارت کے شمال مشرقی قصبے بکٹاونگ میں اپنے خاندان کے ساتھ ایک چار منزلہ گھر میں سکونت پذیر تھا۔ یہ عمارت 100 کمروں پر مشتمل ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق زیونا چنا کا تعلق اس مذہبی فرقے سے تھا جس میں ایک سے زیادہ شادیوں کی اجازت ہے۔ یہ فرقہ زیونا کے دادا نے بنایا تھا۔ زیونا کی پہلی شادی 17 برس کی عمر میں زاتھیانگی نامی خاتون سے ہوئی۔

اس کے بعد ایک سال کے اندر زیونا کی بیویوں کی تعداد 10 تک پہنچ گئی۔ اس کی آخری شادی 2004ء میں 60 برس کی عمر میں ہوئی۔ زیونا کی رہائشی عمارت میں اس کی بیٹیاں اور داماد بھی رہتے ہیں۔ زیونا کے بیٹے اور داماد ایک بڑے کھیت کو سنبھالتے ہیں جو زیونا کی ملکیت ہے۔ اسی سے گھرانے کی غذائی ضروریات پوری ہوتی ہیں۔ علاوہ ازیں ایک فرنیچر کمپنی بھی ہے جس کی آمدنی سے دنیا کے اس سب سے بڑے گھرانے کی دیگر ضروریات زندگی حاصل کی جاتی ہیں۔ گھر کا باورچی خانہ تہہ خانے میں بنا ہے جو زیر زمین پارکنگ کا منظر پیش کرتا ہے۔