.

بغداد میں 2 ڈرون طیارے مار گرائے گئے ، ایک طیارہ دھماکا خیز مواد سے بھرا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں سیکورٹی میڈیا سیل کے اعلان کے مطابق دارالحکومت بغداد کے جنوب میں دو ڈرون طیارے مار گرائے گئے۔ ان میں سے ایک دھماکا خیز ڈرون طیارہ تھا۔

منگل کے روز اعلان کردہ معلومات میں بتایا گیا کہ بغداد آپریشنز کمانڈ نے بارودی ڈرون طیارہ الرشید عسکری کمپ کے نزدیک خالی علاقے میں مار گرایا۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق زعفرانیہ کے علاقے میں دھماکا سنا گیا۔ تاہم مزید تفصیلات نہیں بتائی گئیں۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ عراق میں حکام نے پیر کے روز اعلان کیا تھا کہ ایک ڈرون طیارے نے بغداد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے میں واقع فوجی ایئرپورٹ کے اندر راکٹ گرائے۔ سیکورٹی ذرائع کے مطابق یہ واقعہ پیر کو علی الصبح پیش آیا۔ تاہم حملے میں کوئی جانی یا مادی نقصان نہیں ہوا۔

چار روز قبل امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے بتایا تھا کہ عراقی دارالحکومت بغداد میں امریکی کنٹریکٹرز کی موجودگی کے مقامات پر راکٹ حملوں سے کوئی شدید مادی نقصان یا کوئی زخمی نہیں ہوا۔ ترجمان نے مزید بتایا کہ حملوں کے بعد چند لوگوں کے سانس میں دھواں جانے کے سبب ان کو ہسپتال میں علاج فراہم کر دیا گیا۔

ڈرون طیاروں نے بغداد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے میں واقع وکٹوریا ملٹری بیس کو نشانہ بنایا۔ بغداد ہوائی اڈے کے ملٹری بیس کے حصے میں امریکی فوجیوں سمیت بین الاقوامی افواج شامل ہیں۔ اسی طرح وہاں عراقی فوج بھی موجود ہوتی ہے۔