.

سعودی عرب نے لبنان سےآنے والی نشہ آورکیپٹاگون کی ایک کروڑ40 لاکھ گولیاں ضبط کرلیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی نظامتِ عامہ برائے انسدادِ منشیات نے لبنان سے اسمگل کرکے لائی جانے والی نشہ آوردوا کیپٹاگون ایمفیٹامائن کی ایک کروڑ 40 لاکھ گولیاں ضبط کرلی ہے۔ یہ گولیاں لوہے کی پلیٹوں کی کھیپ میں چھپائی گئی تھیں۔

سعودی کسٹمز نے زکوٰۃ اور ٹیکس اتھارٹی کے ساتھ مل کرجدہ کی بندرگاہ پر لبنان سے آنے والی گولیوں کو ضبط کیا ہے۔سعودی حکام نے الریاض میں ایک شہری کو لاکھوں گولیوں کی یہ کھیپ اسمگل کرنے کے الزام میں گرفتارکر لیا ہے۔

سعودی عرب نے اس سے پہلے اپریل میں بیروت سے منشیات کی اسمگلنگ میں اضافے کے بعدلبنانی پھلوں اور سبزیوں کی درآمد پر پابندی عاید کردی تھی۔تب سعودی کسٹمز نے لبنان سے درآمد کردہ پھلوں کے اندرچھپائی گئی کیپٹاگون کی 50 لاکھ سے زیادہ گولیاں اسمگل کرنے کی کوشش ناکام بنا دی تھی۔

کیپٹاگون ایک نشہ آور دوا ہے اور اس کوجنگوں میں حصہ لینے والےجنگجو استعمال کرتے ہیں کیونکہ اس سے لڑائی کی تھکاوٹ دورہوجاتی ہے۔ایمفیٹامائن گولیوں کو لبنان میں غیرقانونی طور پر تیارکیا جاتاہے اور پھر بیرون ملک اسمگل کیا جاتا ہے۔

سعودی عرب کی جانب سے بیروت سے زرعی پیداوارکی درآمدات پر پابندی کے بعد لبنانی حکام نے منشیات کی اسمگلنگ سے نمٹنے کے لیے مزید اقدامات کا وعدہ کیا تھا۔ لبنان کے نگران وزیر زراعت عباس مرتضیٰ نے کا کہنا ہے کہ یہ معاملہ بہت سنگین ہے۔خاص طور پراس سے باقی خلیجی ریاستوں پر منفی اثرات مرتب ہوسکتے ہیں اور وہ بھی اسی طرح کے سخت اقدامات کر سکتی ہیں۔

ایران کی حمایت یافتہ حزب اللہ ملیشیا کے لبنانی ریاست اور اس کے اداروں پربڑھتے ہوئے اثرورسوخ کے بعد حالیہ برسوں میں بیروت اور الریاض کے درمیان تعلقات میں تلخی آئی ہے۔ حزب اللہ یمن کی حوثی ملیشیا کی بھی حمایت جاری رکھے ہوئے ہے۔یمنی حوثی روزانہ ہی سعودی عرب میں عام شہریوں اورشہری علاقوں پر ڈرون اورمیزائل حملے کررہے ہیں۔

لبنان کی سکیورٹی فورسزنے گذشتہ ہفتے نشہ آور دوا کیپٹاگون کی لاکھوں گولیاں سعودی عرب میں اسمگل کرنے کی کوشش ناکام بنا دی تھی۔لبنانی وزیرداخلہ محمد فہمی کے بہ قول یہ لاکھوں گولیاں بیروت کی بندرگاہ سے سعودی عرب بھیجے جانے والے ایک کنٹینر میں چھپائی گئی تھیں۔یہ کنٹینر میں رکھے گئے پتھر کے ٹکڑوں کے درمیان سے ملی ہیں۔

لبنانی سکیورٹی فورسز پر بیروت کی بندرگاہ سے سعودی عرب بھیجے جانے والے سامان کی مناسب چیکنگ نہ کرنے کا الزام عاید کیا جاتا ہے۔خلیج کے بعض دوسرے ممالک نے سعودی عرب کے اقدام کی حمایت کی تھی اور لبنان سے سبزیوں اور پھلوں کی درآمدات پر پابندی عاید کرنے کی دھمکی دی تھی۔