.

حوثی ملیشیا نے شادیوں پرچھاپوں کے لیے خواتین بریگیڈ تشکیل دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

حوثی ملیشیا نے صنعا میں خفیہ جگہوں پر 100 سے زائد خواتین کو محلوں ، گھروں اور ہالوں میں چھاپوں اور شادی کی تقریبات پر دھاووں کے لیے تربیت دینا شروع کی ہے۔

صنعا کے ذرائع نے انکشاف کیا کہ حوثی ملیشیا نے خواتین کی ایک نئی بٹالین کی تربیت شروع کی ہے جسے انہوں نے "البتول" کا نام دیا ہے۔ اور یہ گروپ نام نہاد زینبیات بریگیڈ کا حصہ ہے ، جس کا مشن براہ راست خواتین کے لباس کی نگرانی کرنا ہے گھروں اور شادی ہالوں میں ہونے والے معاشرتی پروگراموں پر نظر رکھنا ہے۔

ذرائع نےبتایا کہ حوثی ملیشیا کے رہ نماؤں کی صف اول سے خواتین قائدین کا انتخاب کیاگیا ہے جو اس نئے ویمن گروپ کی رہ نمائی کریں گی۔

اس گروپ کی نگرانی کے لیے ام عقیل الشامی، ام محمد عجاف اور دیگر کو منتخب کیا گیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ ملیشیا نے کچھ دن قبل صنعا کے خفیہ مقامات پر 100 سے زائد خواتین کو تربیت فراہم کرنے کا آغاز کیا ہے۔ انہیں گذشتہ ایام میں صنعا کے دیہی علاقوں اور حجہ گورنری سے منتخب کیا گیا۔ انہیں اسلحہ استعمال کرنے کی تربیت دینے کےساتھ ساتھ مارشل آرٹس کی ٹریننگ بھی دی گئی ہے اور انہیں گلیوں ، گھروں اور ہالوں میں چھاپے مارنے کے طریقے سکھائے جا رہے ہیں۔