.

نہر سویزکی بندش کا سبب بننے والا جہاز مصر کو معاوضہ ادا کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ذرائع نے العربیہ کو بتایا کہ مصر نے اس کمپنی کے ساتھ ابتدائی معاہدے پر دستخط کیے ہیں جس کا بحری جہاز "ایور دی گیوین" مارچ میں نہر سویز میں پھنس گیا تھا اور کئی روز تک نہر سویز میں نیوی گیشن کا عمل متاثر رہا۔ ذرائع کے مطابق ’ایور دی گیوین‘ کی مالک کمپنی مصر کو معاوضے کے طور پر 540 ملین ڈالر کی رقم ادا کرےگی۔

اس معاہدے میں یہ شقیں شامل ہیں کہ سویز کینال اتھارٹی مستقبل میں جہاز کی مالک کمپنی کے خلاف کسی شکایت درج نہیں کرے گی اور یہ کہ اتھارٹی اس بات کو یقینی بنائے گی کہ اسے مستقبل میں کسی بھی طرح کی پریشانی کا نشانہ نہیں بنایا جائے گا اور اس کے کام میں آسانی ہوگی۔

جہاز کے پھنس جانے سے نہر سویز میں چھ دن تک نیوی گیشن کا عمل معطل رہا۔ اس دوران دونوں طرف سے آنے والے سیکڑوں بحری جہاز پھنس گئے اور عالمی تجارتی سامان بھی تاخیر کا شکار ہوا۔

ذرائع نے بتایا کہ معاوضہ کی رقم انشورنس کمپنیوں اور برٹش پروٹیکشن اینڈ انشورنس کلب کی شراکت سے ایور دی گیوین جہاز کی ملکیتی کمپنی ادا کرے گی۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ انشورنس کمپنیوں اور جہاز کی ملکیت کمپنی کی جانب سے اس رقم کو 500 ملین ڈالر یا اس سے کم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

اس معاہدے میں سویز کینال اتھارٹی کے ذریعہ ایک نئے جدید جہازوں کے حصول کو شامل کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ سویز کینال اتھارٹی کے حق میں متعدد مراعات والی دیگر دفعات بھی شامل ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ سویز کینال اتھارٹی کی قانونی کمیٹی نے تمام پہلوؤں کا جائزہ لیا اور ان کے بارے میں مشاورت کی۔ آخر کار ایو دی گیوین کی مالک کمپنی کے ساتھ معاہدے کی شرائط منظور کر لیں۔