.
کرونا وائرس

یواے ای:کووِڈ-19کے کیسوں میں کمی،عیدپرحفاظتی قوانین کی پاسداری پرمکینوں کی تعریف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں محکمہ صحت کے حکام نے عید الاضحیٰ کے موقع پر کووڈ-19 کے حفاظتی پروٹوکول کی پاسداری کرنے پر مکینوں کی تعریف کی ہے اور کہا ہے کہ عوام کے عزم سے ملک بھر میں کرونا وائرس کے یومیہ کیسوں میں کمی لانے میں مدد ملی ہے۔

اماراتی حکام نے شہریوں اور مکینوں پر زوردیا تھا کہ وہ عید محفوظ طریقے سے منائیں۔انھوں نے اس خدشے کااظہار کیا تھا کہ عید کی چھٹیوں پر خاندانوں اور دوستوں کے اکٹھ کی وجہ سے کرونا وائرس کے کیسوں میں اضافہ کا ہوسکتا ہے۔

یو اے ای میں رواں سال عیدالفطرکے بعد کووِڈ-19 کے کیسوں کی یومیہ اوسط تعداد 2000 سے زیادہ ہوگئی تھی اور گذشتہ سال عیدالاضحیٰ کے دنوں میں کووِڈ-19 کےاوسطاً یومیہ کیسوں کی تعداد1400 سے زیادہ رہی تھی۔اس طرح تب یومیہ کیسوں میں 500 فی صد تک اضافہ ہوا تھا۔

یواے ای کی نیشنل ایمرجنسی کرائسیس اورڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این سیما) نے منگل کے روزبریفنگ میں انکشاف کیا کہ ملک بھر میں کرونا وائرس کے یومیہ کیسوں کی تعداد میں مسلسل کمی ہورہی ہے۔

این سیما کے ڈاکٹر طاہرالعمیری نے کہا:’’ہم نے اس بار عیدالاضحیٰ مختلف انداز میں منائی ہے۔کمیونٹی نے احتیاطی تدابیر کی پاسداری کی ہے اورمحفوظ انداز میں عید کا جشن منایا گیا ہے۔‘‘

ان کا کہنا ہےکہ کیسوں میں کمی کا مطلب یہ ہے کہ امارات بھر میں معمولات زندگی کی جانب محتاط انداز میں واپسی ہورہی ہے۔ملک کی معاشی اور سیاحتی سرگرمیاں بحال ہورہی ہیں۔‘‘

یواے ای میں بڑے پیمانے پر کروناوائرس کے ٹیسٹ کیے گئے ہیں۔ویکسی نیشن کی تیزترین مہم چلائی گئی ہے۔اس کی وجہ سے امارات میں کروناوائرس کو پھیلنے سے روکنے میں مدد ملی ہے۔

این سیما نے قبل ازیں منگل کو اطلاع دی کہ متحدہ عرب امارات میں 24 گھنٹے میں کووِڈ-19 کے 1539 نئے کیسوں کی تشخیص ہوئی ہے اور پہلے سے اس مہلک وائرس کا شکار 1497 مریض صحت یاب ہوگئے ہیں جبکہ دو مریض وفات پا گئے ہیں۔

یو اے ای میں اب تک کووِڈ-19 سے ہلاکتوں کی تعداد 1927 ہوگئی ہے۔ وبا کے آغاز کے بعد سے کل تشخیص شدہ کیس 673,185 تک پہنچ گئے ہیں۔ان میں سے 650,683 مریض صحت یاب ہوچکے ہیں۔اس وقت ملک میں کروناوائرس کے 20,575 فعال کیس ہیں۔

متحدہ عرب امارات میں اب تک کووِڈ-19 کی ویکسین کی ایک کروڑ 64 لاکھ سے زیادہ خوراکیں لگائی جاچکی ہیں اور قریباً 70 فی صد آبادی کو ویکسین کے دونوں انجیکشن لگائے جاچکے ہیں۔