.

سعودی وزیرخارجہ کی فرانسیسی ہم منصب سے علاقائی اموراور دوطرفہ تعلقات پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے فرانسیسی ہم منصب ژاں وائی ویس لودریان سے ملاقات کی ہے اور ان سے دوطرفہ تعلقات اور علاقائی امور کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ہے۔

فرانسیسی وزارت خارجہ نے اس بات چیت کے بعد جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ فرانس ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کے سعودی عرب کی جانب تمام حملوں کی مذمت کرتا ہے۔

حوثی ملیشیا نے حالیہ دنوں میں سعودی عرب کی جانب بیسوں میزائل داغے ہیں اور بارود سے لدے ڈرون چھوڑے ہیں۔عرب اتحاد نے ان میں بیشتر ڈرونز اور میزائلوں کو سعودی عرب کی سرزمین پر گرنے سے قبل ہی فضا میں ناکارہ بنا دیا ہے۔

فرانس نے یمن میں جاری بحران کے خاتمے کے لیے سعودی عرب کی کاوشوں کی حمایت کا بھی اظہار کیا ہے۔

سعودی عرب نے مارچ میں یمن کی بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ حکومت اور حوثیوں کے درمیان جاری تنازع کے خاتمے کے لیےایک نیا امن منصوبہ پیش کیا تھا۔

لیکن حوثیوں نے اس امن تجویزکا کوئی مثبت جواب نہیں دیا تھا اور انھوں نے تب سے یمن میں جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

امریکا کے محکمہ خارجہ نے صدر جوبائیڈن کے خصوصی ایلچی برائے یمن ٹِم لنڈرکنگ کے خطے کے دورے کے بعد حوثی گروپ کے یمن کے صوبہ مآرب میں تباہ کن حملے اور سعودی عرب کی جانب میزائل اور ڈرون حملوں کی مذمت کی تھی۔