.

سعودی عرب کے دفاعی نظام نے حوثی ملیشیا کا کھلونا ڈرون مارگرایا

ایران کے حمایت یافتہ حوثیوں کی سعودی شہرخمیس مشیط کو بارودی ڈرون سے نشانہ بنانے کی کوشش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فضائی دفاعی نظام نے ہفتے کے روزیمن سے حوثی ملیشیا کے چھوڑے ہوئے ایک کھلونا ڈرون کو مارگرایا ہے۔

ایران کے حمایت یافتہ حوثیوں نے اس ڈرون سے سعودی عرب کے جنوبی شہر خمیس مشیط کو نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی لیکن سعودی عرب کے فضائی دفاعی نظام نے اس کو فضا ہی میں ناکارہ بنا دیا ہے۔

سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد نے کہا ہے کہ یمنی حوثیوں کی شہریوں اور شہری اہداف کو نشانہ بنانے کے تمام حربوں کو ناکام بنادیا گیا ہے۔

یمن میں قانونی حکومت کی حمایت میں برسرپیکاراتحاد نے یہ بھی بتایا ہے کہ سعودی عرب کے جنوبی شہر جازان کی طرف حوثی ملیشیا کے داغے گئے ایک بیلسٹک میزائل کو بھی روک کر تباہ کر دیا گیا ہے۔

عرب اتحاد نے جمعہ کو حوثیوں کے سعودی عرب کے ایک تجارتی بحری جہاز پر حملے کو بھی ناکارہ بنا دیا تھا۔اس حملے کے بعد عرب اتحاد نے ایک بیان میں کہا تھا کہ حوثیوں نےعالمی جہازرانی کوڈرانے دھمکانے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

عرب وزرائے داخلہ کی کونسل اوربحرین کی وزارت خارجہ نے سعودی جہاز پر اس حملےکی مذمت کی تھی۔

عرب اتحاد نے واضح کیا ہے کہ اس نے آبنائے باب المندب سے گزرنے والے بحری جہازوں کی حفاظت اور آزادانہ جہازرانی کو یقینی بنانے کے لیے کوششیں جاری رکھی ہوئی ہیں۔

گذشتہ کچھ عرصے سے حوثی ملیشیا نے مملکت میں شہریوں اور شہری تنصیبات کو نشانہ بنانے کے لیے ڈرون اور بیلسٹک میزائلوں سے حملے تیزکررکھے ہیں۔متعدد عرب اور مغربی ممالک نے حوثیوں کے ان حملوں کی مذمت کی ہے اور انھوں نے حوثی دہشت گردوں کے حملوں کے جواب میں سعودی عرب کی علاقائی سالمیت اس کی سلامتی کی حمایت پرزوردیا ہے۔