.

اسرائیلی جہازپرحملہ؛امریکا کا ایران کے خلاف ’اجتماعی ردِّعمل‘ کا عزم

ہم نے واقعہ کا مکمل جائزہ لیا ہے،ہمیں یقین ہےکہ ایران ہی نے یہ حملہ کیا تھا:انٹونی بلینکن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے خلیج عُمان میں اسرائیل کے زیرانتظام ایک تیل بردار بحری جہاز پرحملے کے ردعمل میں ایران کو ’’اجتماعی جواب ‘‘ دینے کے عزم کا اظہارکیا ہے۔

امریکی وزیرخارجہ انٹونی بلینکن نے سوموار کے روز محکمہ خارجہ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’ہم برطانیہ، اسرائیل ، رومانیہ اور دوسرے ممالک سے قریبی رابطے میں ہیں اور اب (حملے جواب میں) ہمارا اجتماعی ردعمل ہوگا۔‘‘

بلینکن نے پہلی مرتبہ دوٹوک الفاظ میں ایران پر گذشتہ جمعہ کو مرسراسٹریٹ ٹینکر پر ڈرون حملے میں ملوّث ہونے کا الزام عاید کیا ہے جبکہ ایران نے اس حملے میں ملوّث ہونے کی تردید کی ہے۔ڈرون کے جہاز سے ٹکرانے کے بعد عملہ کے دوارکان ہلاک ہوگئے تھے۔

امریکی وزیرخارجہ نے کہا کہ ’’ہم نے واقعے کا مکمل جائزہ لیا ہے اور ہمیں یقین ہے کہ ایران ہی نے یہ حملہ کیا تھا۔‘‘

مسٹربلینکن نے ہفتے کی شب اپنے اسرائیلی ہم منصب یائرلاپیڈ سے اس حملے کے حوالے سے گفتگو کی تھی اور انھوں نے برطانیہ ، رومانیہ اور دوسرے بین الاقوامی شراکت داروں کے ساتھ مل کر حملے کے تمام حقائق کی چھان بین سے اتفاق کیا تھا۔انھوں نے معاونت مہیّا کرنے کے علاوہ آیندہ مناسب اقدامات پر بھی غور کیاتھا۔