.
کرونا وائرس

یو اے ای: 3 سے17سال کی عمر کے بچّوں کے لیے سائنوفارم کی ویکسین دستیاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں اب بچّوں کو بھی کووِڈ-19 کی ویکسین لگائی جارہی ہے اور ملک کی قومی ایمرجنسی کرائسیس اور ڈیزاسسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے کہا ہے کہ تین سے 17 سال کی عمرکے بچّوں کو لگانے کے لیے چینی فرم سائنوفارم کی ویکسین دستیاب ہے۔

این سیما نے سوموار کو ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ ’’بچّوں کے لیے سائنوفارم کی ویکسین استعمال کرنے کی اجازت دینے کافیصلہ کلینکی جانچ اورمسلسل جامع جائزے کے بعد کیا گیا ہے اور یہ کسی ویکسین کی منظوری کے قواعد وضوابط کے عین مطابق ہے۔‘‘

واضح رہے کہ یو اے ای نے جون میں چینی فرم سائنوفارم کی ویکسین کی تین سے 17 سال کی عمر کے بچّوں پرکلنیکی جانچ شروع کی تھی۔تب ابوظبی کے میڈیادفتر نے یہ اطلاع دی تھی کہ اس ٹرائل کے دوران میں 900 بچوں کے مدافعتی ردعمل کا جائزہ لیا گیا ہے تاکہ مستقبل قریب میں یہ ویکسین بچّوں کو لگائی جاسکے۔

اس جانچ میں امارت ابوظبی کے حکمراں خاندان کے بعض بچّوں نے بھی حصہ لیا تھا۔

اس سے پہلے مئی میں یو اے ای نے فائزراور بائیواین ٹیک کی ویکسین کی 12 سے 15 سال کے عمر کے بچّوں کوہنگامی طور پر لگانے کی منظوری دی تھی۔یو اے ای کے وفاق میں شامل دوسری بڑی امارت دبئی نے اس عمر کے گروپ کو جون میں یہ ویکسین لگانا شروع کردی تھی۔

یواے ای کی وزارت صحت نے اتوار کو یہ اعلان کیا تھا کہ ملک کی 78۰9 فی صد آبادی کو کووِڈ-19 ویکسین کی کم سے کم ایک خوراک لگائی جاچکی ہے۔

بلومبرگ کے مطابق یو اے ای دنیا بھر میں ویکسین کی سب سے تیز مہم چلانے والاملک ہے اوراب تک یہاں فی کس کے اعتبار سے سب سے زیادہ افراد کو ویکسین لگائی جاچکی ہے۔