.

تیر کر مکہ جانے کی کوشش کرنے والا ملائیشین نوجوان زیر حراست

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جہازوں اور کشتیوں میں سفر کے زمانے سے قبل تو سنا تھا کہ لوگ پیدل حج و عمرہ کرنے جاتے ہیں لیکن ملائیشین حکام نے ایک ایسے نوجوان کو حراست میں لیا ہے جو کہ بذات خود تیر کر مکہ جانے کی کوشش کر رہا تھا۔

ملائیشیا کے مختلف ابلاغی ذرائع کے مطابق 28 سالہ نوجوان نے تانجونگ شہر کے ساحل سے سمندر میں چھلانگ لگا دی تھی اوراسے کچھ دیر بعد پولیس نے سمندر میں تیرنے کے دوران حراست میں لے لیا تھا۔

ملائیشین اخبار 'نیو سٹریٹس ٹائمز' کے مطابق اس سے قبل بھی اس شخص نے لاک ڈائون کے دوران سمندر کو پار کر کے دوسرے جزیرے پر رہنے والے اپنے دوست کو ملنے کی کوشش کی تھی۔

مقامی پولیس کے سربراہ کے مطابق ابتدائی معلومات کے مطابق ملزم دونوں واقعات میں ملوث ہے۔ اس بار ملزم کا کہنا ہے کہ وہ مکہ جانے کی کوشش کر رہا تھا۔

حکام کے مطابق متاثرہ شخص کو پنانگ ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہےاور اس کا ذہنی توازن چیک کیا جارہا ہے۔

تحقیقات کے مطابق تیراکی کے دوران اس شخص کے جسم سے منشیات کا سراغ نہیں ملا اور پولیس یہ معلوم کرنے کی کوشش کر رہی ہے کہ آخر اس شخص نے تیر کر مکہ جانے کا فیصلہ کیوں کیا۔

ملائیشیا اور سعودی عرب کے ساحلوں کے درمیان فاصلہ 4455 ناٹیکل میل [8250 کلومیٹر] کی دوری پر واقع ہے۔