.

امریکی وزارت خارجہ: 5 شدت پسندوں کے نام دہشت گردی کی فہرست میں درج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزارت خارجہ کے ایک اعلان کے مطابق اس نے عالمی دہشت گردی سے متعلق اپنی خصوصی فہرست میں پانچ افراد کے ناموں کا اضافہ کیا ہے۔ ان افراد کی امریکا میں ہر طرح کی املاک کو منجمد کر دیا جائے گا۔

امریکی وزیر خارجہ اینٹنی بلنکن نے جمعے کی شام جاری ایک بیان میں واضح کیا کہ مذکورہ افراد میں "بن ماضی عمر" بھی شامل ہے۔ وہ موزمبیق میں داعش تنظیم کی شاخ کا سینئر عسکری کمانڈر ہے۔ بلنکن کے مطابق عمر کے زیر قیادت شدت پسندوں کے ایک گروہ نے رواں سال مارچ میں بالما قصبے میں ایک ہوٹل پر حملہ کر کے درجنوں افراد کو ہلاک کر دیا تھا۔

بلنکن نے مزید بتایا کہ فہرست میں سیدانج حیتا اور سالم ولد الحسن کے نام بھی شامل کیے گئے ہیں۔ یہ دونوں افراد مالی میں القاعدہ تنظیم کے ساتھ مربوط ایک دہشت گرد جماعت کے سینئر کمانڈروں میں سے ہیں۔ اسی طرح فہرست میں صومالیہ میں "الشباب" تنظیم کے دو کمانڈر علی محمد راجی اور عبد القادر محمد کے ناموں کو بھی درج کیا گیا ہے۔

مذکورہ پانچوں افراد کے ساتھ لین دین کرنے والے افراد یا غیر ملکی مالیاتی اداروں پر بھی ممکنہ طور پر امریکی پابندیاں عائد کی جائیں گی۔