.

اسرائیل کا لبنان سے دراندازی کی کوشش ناکام بنانے کا دعویٰ، مبینہ درانداز گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایک اسرائیلی اخبار نے ہفتے کی شام انکشاف کیا ہے کہ اسرائیلی فوج نے ایک مشتبہ شخص کو گرفتار کیا ہے جس نے لبنان کی سرحد پارکرکے اسرائیل میں گھسنے کی کوشش کی تھی۔

اخبار’یروشلم پوسٹ‘ نے بتایا کہ اسرائیلی فوجیوں کولبنان کی سرحد پر طلب کیا گیا جنہوں نے مشتبہ شخص کو "چند منٹوں میں" گرفتار کر لیا گیا۔ گرفتار شخص سے تفتیش کی جا رہی ہے۔

لبنان اور اسرائیل کے درمیان مبینہ دراندازی کا یہ واقعہ ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب گذشتہ تین روز کے دوران لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ اور اسرائیل کے درمیان سخت کشیدگی دیکھی گئی اور دونوں فریقین نے ایک دوسرے پر حملے کیے ہیں۔ حزب اللہ نے اسرائیل پر 15 راکٹ داغے۔ اسرائیلی فوج کا دعویٰ ہے کہ اس نے حزب اللہ کے داغے گئے بیشتر راکٹ مار گرائے۔

اسرائیل نے جنوبی لبنان کے مختلف علاقوں پر بمباری کرکے حزب اللہ کے حملوں کا جواب دیا۔ اسرائیلی وزیر دفاع بینی گینٹز نے جمعہ کو حزب اللہ ، فوج اور لبنانی حکومت کو مشورہ دیا کہ تل ابیب کا امتحان نہ لیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم لبنان کے ساتھ کشیدگی نہیں چاہتے۔ تل ابیب کو لبنان میں کوئی دلچسپی نہیں ہے لیکن انہوں نے زور دیا کہ ہم حزب اللہ کو اپنے ساتھ گڑبڑ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے اور یہ بات حزب اللہ بھی اچھی طرح جانتی ہے۔