.

امریکی کانگریس کے ارکان کا ترکی کو ڈرون ٹکنالوجی کی برآمد روک دینے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی کانگریس میں 27 ارکاننے وزیر خارجہ اینٹنی بلنکنسے مطالبہ کیا ہے کہ ترکی کو ڈرون طیاروں کی ٹکنالوجی برآمد کرنے کا عمل معلق کیا جائے۔ یہ بات ترکی میں اپوزیشن کے اخبار روزنامہ "زمان" نے بتائی۔

اخبار کے مطابق مذکورہ ارکانِ کانگریس نے واضح کیا ہے کہ واشنگٹن کی برآمد کردہ ٹکنالوجی سے ترکی جو ڈرون طیارے تیار کر رہا ہے وہ امریکا کے مفادات، حلیفوں اور شراکت داروں کے لیے خطرہ بن رہے ہیں۔ ساتھ ہی یہ کئی ممالک میں عدم استحکام کا بھی باعث ہیں۔

ارکان کانگریس کے مطابق ترکی نے گذشتہ برس ستمبر میں کاراباخ میں آرمینیا کے ساتھ تنازع کے دوران میں ڈرون طیارے آذربائیجان بھیجے تھے۔ یہ طیارے کرد پیپلز پروٹیکشن یونٹس (تنظیم) کے خلاف بھی استعمال ہوئے جو شام میں امریکا کی حلیف جماعت ہے۔ اسی طرح ترکی کے ڈرون طیاروں نے لبیبا کی جنگ میں بھی کردار ادا کیا۔

ارکان نے مزید کہا ہے کہ امریکی ٹکنالوجی کی ترکی منتقلی انسداد دہشت گردی کے قانون کے تحت پابندیوں کے منافی ہے۔ ساتھ ہی مطالبہ کیا گیا کہ اس ٹکنالوجی کی ترکی برآمد کو فوری طور پر روک دیا جائے۔

یاد رہے کہ امریکی وزیر خارجہ اینٹنی بلنکن ترکی پر پابندیاں عائد کرنے کے فیصلے پر دستخط کر چکے ہیں۔ اس اقدام کا سبب ترکی کا روس سے S-400 فضائی دفاعی نظام خریدنا ہے۔