.
افغانستان وطالبان

کابل: انخلاء کی تکمیل کے لیے امریکی فوج نے ہوائی اڈے کا احاطہ محفوظ بنا لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے پیر کے روز ایک اعلان میں بتایا ہے کہ اس نے کابل میں اپنے سفارت خانے کے تقریبا 4000 ملازمین میں سے 500 کے قریب افراد کو منتقل کر دیا ہے۔

امریکی وزارت خارجہ اور وزارت دفاع نے ایک مشترکہ بیان میں انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے کابل کے ہوائی اڈے پر سیکورٹی اقدامات مکمل کر لیے ہیں۔ اس کا مقصد امریکی ملازمین کی محفوظ منتقلی کو یقینی بنانا ہے۔ بیان کے مطابق امریکی فوج نے انخلاء کے عمل کے واسطے دارالحکومت کے ہوائی اڈے کے احاطے کو محفوظ بنا لیا ہے۔

مزید یہ کہ آئندہ دنوں کے دوران میں ہزاروں امریکی شہریوں کا انخلاء عمل میں آئے گا۔

مشترکہ بیان میں بتایا گیا ہے کہ امریکا انخلاء کے عمل کو مکمل کرنے کے لیے اپنی سیکورٹی کو 6 ہزار فوجیوں تک بڑھائے گا۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ نے اتوار کے روز 1000 اضافی فوجی افغان دارالحکومت کابل بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے۔

امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق وزارت دفاع پینٹاگان نے یہ فیصلہ حکومت کے سقوط کے بعد انخلاء میں مدد کے لیے کیا ہے۔

وزیر خارجہ اینٹنی بلنکن یہ باور کرا چکے ہیں کہ واشنگٹن کو ہر گز یہ توقع نہ تھی کہ طالبان تحریک اتنی تیزی سے پیش قدمی کرے گی۔

واضح رہے کہ طالبان کے کابل میں داخل ہونے کے بعد چند گھنٹوں کے دوران میں دارالحکومت کی انتظامیہ سرکاری طور پر ان کے حوالے کر دی گئی۔ یہ پیش رفت سیکورٹی فورسز کے فرار ہو جانے کے بعد سامنے آئی۔