.
کرونا وائرس

امریکا، اسرائیل اور چار دیگر ممالک کے نام ابوظبی کی کووڈ-19 گرین لسٹ سے خارج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کے وفاق میں شامل امارت ابوظبی نے امریکا، اسرائیل، اٹلی اور تین دوسرے ممالک کے نام 18 اگست سے اپنی گرین لسٹ سے حذف کردیے ہیں۔

امارت نے آرمینیا، آسٹریا اور مالدیپ کو بھی اپنی سبزفہرست سے ہٹا دیا ہے۔اس نے یہ فیصلہ ان ممالک میں کووڈ-19 کے بڑھتے ہوئے کیسوں کے پیش نظر کیا ہے۔

بدھ سے ان نئی تبدیلیوں کا نفاذ ہوگا اور اس کے بعد گرین لسٹ میں ان ممالک کے نام شامل ہوں گے: البانیا،آسٹریلیا، بحرین، بیلجیئم، برونائی، بلغاریہ، کینیڈا، چین، جمہوریہ چیک ، جرمنی، ہانگ کانگ، ہنگری، مالٹا،ماریشس، مالدووا، نیوزی لینڈ، پولینڈ، جمہوریہ آئرلینڈ، رومانیہ، سعودی عرب، سربیا، سیشلز، سنگاپور، جنوبی کوریا، سویڈن، سوئٹزرلینڈ، تائیوان اور یوکرین۔

بحرین، سربیا، یونان اور سیشلز کو سفری راہداری ممالک کے طور پر شامل کیا گیا ہے، یعنی ان ممالک سے آنے والے ایسے مسافروں کو ابوظبی پہنچنے پر قرنطین کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی جنھوں نے کووِڈ-19 کی ویکسین لگوا رکھی ہے۔

غیرسبز(نان گرین) فہرست میں شامل ممالک سے سفر کرنے والے مسافروں کو ابوظبی میں کلائی پربینڈ پہننے کی ضرورت ہوگی اور انھیں لازمی طور پر سات روزتک قرنطین میں رہنا ہوگا۔ محکمہ صحت کے حکام اس بینڈ کے ذریعے ہی ان کے قرنطینہ کی نگرانی کرسکیں گے۔

ویکسین لگوانے والے زائرین اور سیاح اب اپنے ویکسین کے بین الاقوامی سرٹی فکیٹ کی تصدیق کرسکتے ہیں۔ گذشتہ اتوار کو ابوظبی کی ایمرجنسی، کرائسس اینڈ ڈیزاسٹرز کمیٹی نے تصدیقی عمل کا اعلان کیا تھا۔سیاحوں اور زائرین کو روانگی سے قبل وفاقی اتھارٹی برائے شہریت اور شناخت کی ایپ (آئی سی اے) پر اپنا سرٹی فکیٹ رجسٹر کرنا ہوگا اوراس کو اپ لوڈ کرنا ہوگا۔

اس کے بعد متعلقہ فرد کو ایس ایم ایس پیغام کے ذریعے ایک لنک موصول ہوگا۔اس سے وہ الحوسن ایپ لاگ ان ہوں گے اور ان کے موبائل فون پرابوظبی پہنچنے کے بعد یہ ایپ فعال ہو جائے گی۔تاہم ویکسین نہ لگوانے والے مسافروں کو دس دن تک قرنطینہ کرنے کی ضرورت ہوگی۔