.

امریکی شہری سکیورٹی خدشات کے پیش نظرکابل ائیرپورٹ کارُخ نہ کریں: سفارت خانہ کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان میں امریکا کے سفارت خانہ نے ملک میں موجود اپنے شہریوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ سکیورٹی خدشات کے پیش نظرسفر کے لیے کابل کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کی طرف جانے سے گریز کریں۔

امریکی سفارت خانہ نے ہفتے کے روز اپنی ہدایت میں کہا ہے کہ ’’کابل ائیرپورٹ کے دروازوں کے باہرممکنہ سکیورٹی خدشات لاحق ہوسکتے ہیں،اس کے پیش نظر ہم امریکی شہریوں کو مشورہ دیتے ہیں کہ وہ ہوائی اڈے کی جانب سفر سے گریز کریں۔‘‘

اس نے مزید کہا ہے کہ ’’امریکی شہری کابل کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے دروازوں کی جانب اس وقت تک نہیں آئیں جب تک انھیں امریکی حکومت کے کسی نمایندے کی جانب سے ایسا کرنے کے لیے نہیں کہا جاتا ہے۔‘‘

کابل میں گذشتہ اتوارکوطالبان کے کنٹرول کے بعد سے روزانہ ہزاروں غیرملکی اور افغان شہری ہوائی اڈے کا رُخ کررہے ہیں اور انھیں امریکا اور دوسرے ممالک کی خصوصی پروازوں کے ذریعے بیرون ملک منتقل کیا جارہا ہے۔

’طالبان کاافغانستان‘ چھوڑکربیرون ملک جانے کے خواہاں افغانوں کا ہوائی اڈے اور اس کے باہرکے علاقے میں رش لگا ہواہے اورگذشتہ ایک ہفتے سے وہاں افراتفری کا عالم ہے۔اس دوران میں تشدد یابھگدڑ کے واقعات اور طیاروں سے چمٹنے کے بعد گر کردس سے زیادہ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوچکے ہیں۔