.

جب ’جرمن چانسلر کو پوتین کے سامنے شرمندہ ہونا پڑا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جرمن چانسلر انجیلا مرکل کو روسی صدر ولادی میر پیوٹن کے ساتھ ماسکو میں ملاقات کے دوران اس وقت شرمندہ ہونا پڑا جب کل جمعہ کو ملاقات کے دوران گفتگوغیر متوقع ان کے فون کے گھنٹی بج اٹھی اور دونوں کے درمیان قطع کلامی کا باعث بنی۔

ملاقات کے دوران جب پوتین روس ۔ جرمن رابطوں اور معیشت کی ترقی کے بارے میں بات کر رہے تھے۔ انہوں نے اچانک میرکل کے موبائل فون کی گھنٹی سنی۔ جرمن چانسلر اسے بند کرنے پر مجبور ہو گئیں۔

پوتین نے صورتحال کے بارے میں مذاق کرتے ہوئے کہا کہ " ہم ہمیشہ فون کے ذریعے رابطے میں رہتے ہیں۔"

کریملن میں مذاکرات کے آغاز سے پہلے روسی رہ نما نے جرمن مہمان کو پھولوں کا گلدستہ پیش کیا۔ جرمن چانسلر کا روس کا یہ الوداعی دورہ ہے کیونکہ وہ کچھ عرصے بعد اقتدار سے سبکدوش ہوجائیں گی۔

سابقہ واقعات

ماضی میں پوتین اور میرکل کی ملاقاتوں میں کئی ایسے مضحکہ خیز واقعات رونما ہوچکے ہیں جن میں کبھی جرمن چانسلر اور کبھی صدر پوتین کو شرمسار ہونا پڑا۔ حالیہ عرصے کےدوران دونوں کےدرمیان سرد مہری اور کشیدگی بھی رہی ہے۔

ایک مضحکہ خیز صورت حال اس وقت دیکھی گئی جب روسی صدر ولادیمیر پوتین نے جرمن چانسلر اور اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس کے ساتھ جنوری 2020 میں لیبیا کے حوالے سے برلن کانفرنس کے دوران روسی زبان میں بات کی۔

دسمبر 2015 میں پیرس کلائمیٹ سمٹ میں شرکت کے دوران پوتین کے لیے ایک عجیب لمحہ تھا جب میرکل کے شوہر یوآخم سوئر نے سیٹ کھینچ کر اسے گھسیٹنے کی کوشش کی جب کہ صدر پوتین اسی سیٹ پر بیٹھنے کی کوشش کر رہے تھے۔

پوتین کے کتے کا خوف

سنہ 2007 میں پوتین اور جرمن چانسلر کے درمیان ہونے والی ملاقات میں اس وقت کے روسی صدر کا کالا کتا اس ہال میں داخل ہوا جہاں دونوں رہ نما بیٹھے تھیں۔ کتے کو دیکھ کر میرکل میں طوطے اڑ گئے اور وہ بہت زیادہ گھبرائیں۔

اس صورتحال نے روسی صدر کو اس سے معافی مانگنے پر مجبور کیا اور کہا کہ مجھے اندازہ نہیں تھا کہ آپ کتوں سے اتنا ڈرتی ہیں۔

رپورٹس میں اشارہ کیا گیا تھا کہ 1995 میں ایک کتے نے میرکل پر حملہ کر دیا تھا جس کے بعد وہ کتوں سے خوف زدہ رہتی تھیں۔