.
کرونا وائرس

سعودی عرب: 12 سے17سال عمرکے بچّوں،بالغوں کے لیے ماڈرنا کی ویکسین کی منظوری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب نے 12 سے 17 سال تک عمر کے بچّوں اور بالغوں کو لگانے کے لیےماڈرنا کی کووِڈ-19 کی ویکسین کی منظوری دے دی ہے۔

سعودی پریس ایجنسی نے اتوار کو اطلاع دی ہے کہ ماڈرناکمپنی نے مملکت کی خوراک اورادویہ اتھارٹی کو اپنی تیارکردہ ویکسین کی منظوری کے لیے باضابطہ درخواست دی تھی۔اس کا جائزہ لینے کے بعد اتھارٹی نے مذکورہ عمر کے گروپ کے لیے اس ویکسین کے استعمال کی منظوری دے دی ہے۔

کمپنی نے اپنی درخواست کے ساتھ ویکسین کی کلینکی جانچ سے متعلق ڈیٹا بھی مہیا کیا تھا اور اس میں کلینکی مطالعات اور رپورٹس کی بنا پر کہا گیا تھا کہ یہ ویکسین خصوصی ریگولیٹری تقاضوں کے عین مطابق اور محفوظ ہے۔

بیان کے مطابق مطالعات سے یہ ظاہرہوا ہے کہ ماڈرنا کی ویکسین کے مخصوص عمرگروپ کے لیے فوائد ممکنہ خطرات کے مقابلے میں کہیں زیادہ ہیں اور یہ 12 سے 17 سال کی عمر کے بچّوں اوربالغوں پر استعمال کے لیے محفوظ ہے۔

سعودی عرب کی وزارت تعلیم نے ایک روز قبل ہی ویکسین نہ لگوانے والے طلبہ کے نجی اور سرکاری اسکولوں میں داخلے پر پابندی عاید کرنے کا اعلان کیا ہے۔جن طلبہ وطالبات نے ابھی تک منظورشدہ کسی بھی ویکسین کی دونوں خوراکیں نہیں لگوائی ہیں،انھیں غیرحاضر شمار کیا جائے گا۔

سعودی عرب میں نئے تعلیمی سال کا 29 اگست سے آغاز ہوگا۔اس سے قبل وزارت تعلیم اور صحت کے حکام طلبہ کی جماعتوں میں محفوظ واپسی کے لیے ویکسین لگوانے پراصرار کررہے ہیں اور اسی وجہ سے وزارت تعلیم نے ویکسین کی دونوں خوراکیں لگوانے والے طلبہ ہی کو اسکولوں میں آنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے اور باقی طلبہ سے کہا ہے کہ وہ اسکولوں میں لوٹنے سے پہلے ویکسین ضرورلگوائیں۔

واضح رہے کہ سعودی عرب نے قبل ازیں 9 جولائی کو 17 سال اور اس سے زیادہ عمر کے افراد کو ماڈرنا کی ویکسین لگانے کی منظوری دی تھی۔اس سے پہلے سعودی اتھارٹی فائزر-بائیواین ٹیک اور آکسفورڈ-آسٹرززینیکا کی تیارکردہ ویکسینوں کے استعمال کی منظوری دے چکی ہے۔ملکت بھر میں قائم 587 مراکز میں یہ ویکسینیں سعودی شہریوں اور مکینوں کو لگائی جارہی ہیں۔