.

عرب پارلیمان کی یمن میں العند فوجی اڈے پرحوثیوں کے حملے کی شدید مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب ممالک کی نمائندہ پارلیمنٹ نے یمن کی لحج گورنری میں العند فوجی اڈے پرایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کے حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے اس کی آزادانہ تحقیقات کامطالبہ کیا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز العند فوجی اڈے پرحوثیوں کے میزائل اور بمبار ڈرون طیاروں سے کیے جانے والے حملوں میں تیس فوجیوں سمیت درجنوں افراد جاں بحق اور زخمی ہوگئے تھے۔

عرب پارلیمنٹ کی طرف سے جاری ایک بیان میں یمن میں حوثیوں کے بڑھتے حملوں کی شدید مذمت کی گئی ہے۔ عرب پارلیمان نے حوثیوں کی دہشت گردانہ روش کی روک تھام کے لیے بین الاقوامی قراردادوں پرعمل درآمد پر زور دیا ہے۔

عرب پارلیمنٹ کا کہنا ہے کہ حوثی ملیشیا کے حملے علاقائی اور عالمی امن کے لیے سنگین خطرہ ہیں۔

عرب پارلیمنٹ نے حوثیوں کے حملوں کی ذمہ داری بالواسطہ طورپر ایران پرعاید کی اور کہا کہ ایران کی طرف سے حوثیوں کو اسلحہ اور رقوم فراہم کی جا رہی ہیں۔ حوثیوں کی طرف سے ملک میں ہونےوالے دہشت گردانہ حملے یمنی بحران کی علاقائی، عرب اور عالمی مساعی بری طرح متاثر ہو رہی ہیں۔

واضح رہے کہ اتوار کو العند فوجی اڈے پر حوثیوں کے تباہ کن حملے میں 40 فوجی جاں بحق ہوگئے تھے۔