.
افغانستان وطالبان

امریکی چلے گئے، کتے چھوڑ گئے، عوام میں غصہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان سے امریکی فوج کی مکمل واپسی کی اطلاعات کے ساتھ ہی میڈیا پر کابل کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر تربیت یافتہ کتوں کی موجودگی کے بعد امریکیوں میں اپنی فوج کے خلاف سخت برہمی پائی جا رہی ہے۔

کابل ہوائی اڈے پرامریکی فوج کے کتوں کی موجودگی کی اطلاعات اور تصاویر سامنے آنے کے بعد امریکی سخت مشتعل ہیں اور وہ فوج پر کتوں کو ایئرپورٹ کے گوداموں میں پیچھے چھوڑنے اور طالبان کے کنٹرول میں دینے پر سخت غصے کا اظہار کررہے ہیں۔ حیوانات کے لیے کام کرنے والے اداروں نے امریکی فوج کے اس اقدام کی شدید مذمت کی ہے۔

واشنگٹن ٹائمز کے مطابق اینیمل ویلفیئر گروپ کی طرف سے پیر کی رات جاری کردہ ایک بیان میں امریکی فوج نے اپنے تربیت یافتہ کام کرنے والے کتوں کو چھوڑ دیا ہے۔ امریکی جانوروں کی فلاح و بہبود کی تنظیم نےکتوں کو طالبان کے لیے چھوڑنے اور انہیں موت کے گھاٹ اتارے جانے کے خطرے سے دوچار کرنے کی مذمت کی گئی ہے۔

امریکن ہیومن کے صدر اور ’سی ای او رابن آرگانزیرٹ‘نے کہا کہ یہ بہادرکتے ہمارے فوج کے لیے کام کرتے تھے۔

وہ کس طرح خطرناک ماحول اور جان بچانے والے کام کرتے ہیں۔ وہ بہتر انجام کے مستحق ہیں۔

انہوں نے مزید کہا ہمیں تکلیف ہوتی ہے کہ ہم خاموش بیٹھے رہیں اور ان بہادر کتوں کو دیکھیں جنہوں نے بہادری سے ہمارے ملک کی خدمت کی ہے کیونکہ وہ مارے گئے یا مر رہے ہیں۔

امریکی ہیومن تنظیم جس نے پہلی جنگ عظیم کے بعد سے خدمت کرنے والے جانوروں کو تربیت دی اور بچایا ہے نے کہا کہ وہ ان تربیت یافتہ کتوں کو امریکی سرزمین تک پہنچانے میں مدد دے گی اور انہیں زندگی بھر طبی دیکھ بھال کرے گی۔