.

کینیڈا : احتجاجیوں نے وزیر اعظم کو کنکریاں ماریں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کینیڈا کے وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو پیر کے روز اُس وقت مشکل میں پھنس گئے جب وہ اپنی انتخابی مہم کے سلسلے میں اونٹاریو صوبے کا دورہ کر رہے تھے۔ اس موقع پر کرونا وائرس سے متعلق پابندیوں اور ویکسین کے حوالے سے اقدامات کے مخالف افراد نے ٹروڈو پر کنکریاں اُچھا لیں۔

سوشل میڈیا پر سامنے آنے والے مناظر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ٹروڈو کے اپنی 'مہم بس' میں سوار ہوتے وقت اُن پر متعدد چھوٹی اشیاء پھینکی گئیں جن میں چھوٹے پتھر بھی شامل تھے۔

ٹروڈو پر پتھراؤ کرنے والے افراد کرونا وائرس کے خلاف ویکسی نیشن کی پالیسی پر احتجاج کر رہے تھے۔

امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے مطابق ٹروڈو نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ انہیں کوئی نقصان نہیں پہنچا۔ کینیڈین وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ وہ چھوٹی سی کنکریاں تھیں اور یہ کوئی سنگین بات نہیں۔

یاد رہے کہ جسٹن ٹروڈو کو اپنی انتخابی مہم میں کئی مرتبہ بپھرے ہوئے مظاہرین اور ویکسین پالیسی کے مخالفین کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

ٹروڈو نے گذشتہ ماہ اگست کے وسط میں اعلان کیا تھا کہ ملک میں قبل از وقت انتخابات 20 ستمبر کو منعقد ہوں گے۔ واضح رہے کہ آخری عام انتخابات کے اجرا کو دو سال سے بھی کم عرصہ گزرا ہے۔