.

یواے ای:6.5 ارب ڈالرکے50 منصوبے؛ 75ہزارملازمتیں پیدا ہوں گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات نے اپنے 50 منصوبوں کے اقدام کے حصے کے طورپرآیندہ پانچ سال کے دوران میں نجی شعبے میں ساڑھے چھے ارب ڈالر (24 ارب اے ای ڈی) کی سرمایہ کاری کرنے کا اعلان کیا ہے۔اس سے اماراتی شہریوں کے لیے 75,000 ملازمتیں پیداہوں گی۔

اماراتی حکومت نے اتوارکو نجی شعبے میں ملازمتوں کے اس منصوبے کی مزید تفصیل جاری کی ہے اورکہا کہ وہ اس مدت کے دوران میں نجی شعبے میں شہری ملازمین کے لیے ریٹائرمنٹ فنڈ میں آجرکی زیادہ ترشراکت برداشت کرے گی۔

متحدہ عرب امارات نجی شعبے میں مخصوص کام کرنے والے شہریوں کی مدد کے لیے وظیفے کا ایک پروگرام مختص کرنے کا بھی ارادہ رکھتا ہے۔اس میں پروگرامرز، نرسیں اور اکاؤنٹینٹس وغیرہ شامل ہیں۔

ان میں ہرایک کو اگلے پانچ سال میں ان کی باقاعدہ تنخواہوں کے علاوہ قریباً 1,361 ڈالر (5,000 اماراتی درہم) ماہانہ ایک مقررہ بونس اداکیا جائے گا۔

حکومت نے یہ بھی اعلان کیا ہےکہ وہ تربیتی مدت کے دوران میں پورے ایک سال تک نجی شعبے میں کام کرنے والے اپنے شہریوں کی تربیت کے اخراجات برداشت کرے گی۔اماراتی یونیورسٹی کے طلبہ کو قریباً 2178 ڈالر (8000 اماراتی درہم) ماہانہ تنخواہ ادا کی جائے گی۔

اماراتی حکومت مختلف شعبوں میں شہریوں کے لیے خصوصی تربیتی پروگراموں پرقریباً 27 کروڑ 20 لاکھ ڈالر (1 ارب درہم) اورقریباً 6 کروڑ80 لاکھ ڈالر (25امارتی درہم) مختص کرنے کا بھی ارادہ رکھتی ہے۔

اس کے علاوہ نجی شعبے میں کام کرنے والے اماراتی شہریوں کو فی بچّہ قریباً 217 ڈالر (800 درہم) الاؤنس دیا جائے گا۔یہ رقم مجموعی طورپر زیادہ سے زیادہ 980 ڈالر (3600 درہم) تک ہوگی۔

متحدہ عرب امارات اپنے قیام کے پچاس سال پورے ہونے کے موقع پر مختلف شعبوں میں ترقیاتی اور اقتصادی منصوبے شروع کررہاہے۔ان کا مقصد اگلے 50 سال کے لیے متحدہ عرب امارات کو سرمایہ کاری اور معاشی تخلیقی صلاحیتوں کا عالمی مرکز بنانا ہے۔اس کے علاوہ ملک کو کاروباری اورابھرتے ہوئے منصوبوں اور نئے معاشی مواقع کے لیے ایک مربوط اور جدید تجربہ گاہ بنانا ہے۔