.

دبئی نمائش2020ء:کووِڈ-19 ویکسین لگوانے کاثبوت یا منفی پی سی آررپورٹ دکھانے پرداخلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دبئی میں آیندہ ماہ سے منعقد ہونے والی عالمی نمائش کے منتظمین نے کہا ہے کہ 18 سال سے زیادہ عمر کے تمام افراد کوکووِڈ-19 کی ویکسین لگوانے کا ثبوت فراہم کرناہوگا یا پی سی آرٹیسٹ کی منفی رپورٹ دکھانے کی صورت ہی میں انھیں دبئی ایکسپو 2020ء میں داخل ہونے کی اجازت دی جائے گی۔

منتظمین کے مطابق نمائش گاہ میں آنے سے 72 گھنٹے قبل کرائے گئے پی سی آر ٹیسٹ کا منفی نتیجہ کارآمد ہوگا۔اس کے علاوہ نمائش دیکھنے کے لیے آنے والے افراد کو چہرے پر ماسک پہننا ہوگا اور سماجی فاصلے کے قواعد وضوابط کی پاسداری کرنا ہوگی۔

ویکسین نہ لگوانے والے زائرین دبئی ایکسپو کی جگہ سے متصل لیبارٹری میں بھی پی سی آر ٹیسٹ کراسکیں گے۔امارت دبئی کے دوسرے علاقوں میں بھی ٹیسٹ مراکز قائم کیے گئے ہیں اور ان کے بارے میں معلومات ایکسپو2020 کی ویب گاہ سے حاصل کی جاسکتی ہیں۔

منتظمین کا کہنا ہے کہ نمائش 2020ء کے کارآمدٹکٹ یا داخلے کے پاس کے حامل افراد سے دبئی میں واقع ان مراکز میں پی سی آر ٹیسٹ کرانے کی کوئی اضافی فیس نہیں لی جائے گی۔

متحدہ عرب امارات میں آیندہ چھے ماہ کے دوران میں توقع ہے کہ ڈھائی کروڑ سیاح اور زائرین اس عالمی نمائش کو دیکھنے کے لیے آئیں گے۔کووِڈ-19 کی وبا کے بعد دنیا میں یہ پہلا بڑاثقافتی اجتماع ہوگا۔کرونا وائرس کی وبا کی وجہ سے منتظمین کواس عالمی نمائش کو ایک سال کے لیے مؤخر کرنا پڑا ہے۔پہلے یہ نمائش 2020ء میں منعقد ہونا تھی۔

متحدہ عرب امارات کی وزیرمملکت برائے بین الاقوامی تعاون اورایکسپو 2020ء کی ڈائریکٹر جنرل ریم الہاشمی نے حفاظتی احتیاطی تدابیر کے حوالے سے کہا ہے کہ ان کا مقصد دنیا بھر سے آنے والے زائرین کو ایک محفوظ ماحول مہیّا کرنا ہے۔نیز جب ہم دنیا پراپنے دروازے کھول رہے ہیں توصحتِ عامہ کے تحفظ کے لیے یہ ذمہ دارانہ اقدامات ناگزیر ہیں۔

یکم اکتوبر سے شروع ہونے والی دبئی ایکسپو 2020ءدنیا کا سب سے بڑا ثقافتی، کورباری اور تجارتی اجتماع ثابت ہوگی۔اس میں روزانہ 60 سے زیادہ براہ راست تقریبات ہوں گی۔ یہ نمائش مسلسل 182 دن تک جاری رہے گی اور اس میں دنیا کی مختلف رنگا رنگ ثقافتوں کو اجاگر کیا جائے گا۔

دبئی ایکسپو میں 200 سے زیادہ ادارے اپنے متاثرکن تجربات کا تبادلہ کریں گے۔نمائش میں دنیا کے بیشتر ممالک کے پویلین ہوں گے جہاں وہ اپنی ساختہ مصنوعات اور رنگارنگ ثقافت کو پیش کریں گے۔ان کے علاوہ کثیر جہت تنظیمیں، کمپنیاں اور تعلیمی ادارے بھی اس نمائش میں شرکت کررہے ہیں۔