.

امریکی کانگریس : اسرائیلی آئرن ڈوم سسٹم تنازع کا باعث

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی کانگریس میں شدید نوعیت کا تنازع جاری ہے۔ یہ تنازع ڈیموکریٹس کی جانب سے ایک قانونی بل میں سے اسرائیلی میزائل ڈیفنس سسٹم (آئرن ڈوم) کی فنڈنگ کو نکال دیے جانے کے بعد پیدا ہوا۔

امریکی ایوان نمائندگان میں ڈیموکریٹس کی اکثریت کے سربراہ اسٹینی ہوئر نے منگل کی شام بتایا کہ ایوان میں رواں ہفتے کے اختتام سے قبل ایک بل پر رائے شماری ہو گی ، بل میں آئرن ڈوم کی فنڈنگ شامل ہے۔ یہ رائے شماری ایک دوسرے بل سے مذکورہ فنڈنگ کے نکال دیے جانے کے جواب میں ہو گی۔

اسی طرح ہوئر نے باور کرایا کہ وہ رواں ہفتے کے اختتام سے قبل ایک بل پر رائے شماری کا ارادہ رکھتے ہیں جس میں آئرن ڈوم کی مکمل فنڈنگ ہو گی۔ ہوئر نے زور دے کر کہا کہ یہ (آئرن ڈوم) سسٹم اسرائیل کی سیکورٹی کے دفاع کی مکمل بنیاد ہے۔

ایوان نمائندگان میں منظوری کے بعد اس بل کو سینیٹ سے منظور کرانا لازم ہو گا تا کہ پھر صدر جو بائیڈن کے دستخط کے لیے پیش کیا جا سکے۔

ہوئر کے مطابق صدر بائیڈن یہ چاہتے ہیں کہ اس بل کے متن کی منظوری دے دی جائے۔ کانگریس میں تمام قیادت ایسا ہی کرے گی۔

اس سے قبل ڈیموکریٹک پارٹی کے بائیں بازو کے موقف کے حامل ارکان نے آئرن ڈوم کے لیے تقریبا ایک ارب ڈالر کی فنڈنگ کو قانونی بل سے نکال دیا تھا۔ ان ارکان کا یہ کہنا تھا کہ اسرائیلی حکومت اور آئرن ڈوم دونوں کی فنڈنگ کو ایک بل میں اکٹھا نہیں ہونا چاہیے۔