طالبان کا حکم: ہلمند میں حجامت کی دکانوں پر داڑھی مونڈنے اور موسیقی پر پابندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

گذشتہ ماہ اگست کے وسط سے افغانستان پر کنٹرول رکھنے والے طالبان کی جانب سے نئے احکامات کا سلسلہ جاری ہے۔

اس حوالے سے جنوبی صوبے ہلمند میں طالبان ذمے داران کی جانب سے جاری تازہ ترین نوٹیفکیشن میں حجامت کا کام کرنے والے تمام افراد کو داڑھی کاٹنے اور کام کے دوران دکان میں موسیقی لگانے سے روک دیا گیا ہے۔

مقامی حکام کی جانب سے اتوار کے روز جاری بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ آج بروز پیر کی صبح سے حجامت کی تمام دکانوں پر داڑھی مونڈنا اور موسیقی بجانا ممنوع ہو گا۔ خلاف ورزی کرنے والوں کو سزا کا سامنا ہو گا اور ان کو اس حوالے سے کوئی شکایت پیش کرنے کا حق نہیں ہو گا۔

طالبان
طالبان

معلوم رہے کہ طالبان تحریک کے ذمے داران نے کچھ عرصہ قبل عندیہ دیا تھا کہ تحریک کی پالیسی میں نرمی لائی جائے گی تاہم زمینی حقائق اس کے عکاس نہیں۔

طالبان تحریک کے ایک بانی رکن نے چند روز قبل یہ بھی باور کرایا تھا کہ سزائے موت اور ہاتھ کاٹنے کی سزا دوبارہ سے نافذ کی جائے گی۔

طالبان نے ہرات میں چار افراد کو سرعام پھانسی دے دی
طالبان نے ہرات میں چار افراد کو سرعام پھانسی دے دی

اسی طرح طالبان تحریک نے رواں ماہ کے آغاز پر موسیقی سکھانے کے کئی اداروں کو بند کر دیا تھا اور ابھی تک بچیوں کے لیے اسکول بھی نہیں کھولے گئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں