.

وڈیو : ایندھن کے حصول کے لیے انگریز بھی لبنانیوں کی طرح لڑنے لگے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

گذشتہ تقریبا 10 روز سے ایندھن کی قلت کے سبب برطانیہ کی صورت حال لبنان سے ملتی جلتی ہو گئی ہے۔ اگرچہ دونوں ملکوں میں قلت کی وجوہات مختلف ہیں تاہم پٹرول اور ڈیزل کے حصول کے لیے بپھرے ہوئے عوام کا غصہ ایک جیسا ہے۔

اس سلسلے میں پیر کے روز لندن کے جنوب مشرقی علاقے Welling میں ایک فیول اسٹیشن پر ناخوش گوار واقعہ بھی پیش آیا۔ تفصیلات کے مطابق اسٹیشن پر گاڑیوں کی ایک لمبی قطار موجود تھی۔ اس دوران میں قطار کے باہر سے ایک گاڑی نے آ کر جگہ پر قبضہ کر لیا۔ اس پر پہلے سے منتظر گاڑی میں بیٹھا شخص غصے کے مارے باہر آیا۔ اس نے زیادتی کے مرتکب ڈرائیور کا رخ کیا اور اس کے ہاتھ میں چاقو تھا۔ اش شخص نے جا کر سامنے والی گاڑی کے ڈرائیور پر چلانا اور اس کے دروازے پر لاتیں برسانا شروع کر دیا۔ مزید یہ کہ ڈرائیور کے دروازے کے شیشے پر بھی ہاتھ مارے تا کہ گاڑی کے ڈرائیور کو آگاہ کر سکے کہ اس نے قطار میں پچھلی گاڑی کی جگہ پر قبضہ کر لیا ہے۔ آخر کار قطار میں گاڑی گھسانے والا شخص گاڑی پیچھے لے جانے پر مجبور ہو گیا۔

سوشل میڈیا پر اس واقعے کی وڈیو وائرل ہو گئی۔ گذشتہ روز تک وڈیو کو 10 لاکھ سے زیادہ مرتبہ دیکھا جا چکا تھا۔

برطانیہ میں ایندھن دستیاب ہے تاہم انہیں فیول اسٹیشنوں تک پہنچانے کے لیے تقریبا ایک لاکھ ٹرک ڈرائیوروں کی کمی کا سامنا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ برطانیہ کے یورپی یونین سے نکل جانے کے بعد ہزاروں غیر ملکی ڈرائیورز اپنے ملکوں کو واپس چلے گئے اور اس خلا کو پورا بھی نہیں کیا گیا۔