.

چھ سالہ سعودی بچی سانپ کے ڈسنے سے ہلاک، والدہ کیا بتاتی ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں چھ سالہ سعودی بچی کے سانپ کے ڈسنے سے ہلاکت کے واقعہ پر سوشل میڈیا پر رنج کا اظہار کیا جا رہا ہے۔

یہ واقعہ ابہا میں پیش آیا جہاں واش روم میں اسے سانپ نے ڈس لیا سعودی بچی تمارا عبدالرحمن کی تدفین کردی گئی ہے۔

سعودی بچی کی والدہ نے واقعے کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ’ واش روم جانے کے چند سیکنڈ بعد میری بیٹی کی چیخ کی آواز سنی، تیزی سے گئی تو بیٹی نے بتایا کہ چوہا اسے کاٹ کر بھاگ گیا ہے‘۔

والدہ کا کہنا ہے کہ ’ واش روم میں ہر طرف نظر دوڑائی مگر کہیں کچھ نظر نہیں آیا پھر بچی کے جسم پر خراش کا نشان دیکھا، ایک جگہ کاٹنے کا نشان نظر آیا‘۔

تمارا کو فوری طور پر ابہا جنرل ہسپتال میں داخل کر دیا گیا۔ طبی معائنے سے پتہ چلا کہ اسے چوہے نے نہیں بلکہ سانپ نے ڈسا تھا۔
اہل خانہ کے مطابق ’گھر سے ہسپتال جانے اور وہاں صبح تک تمارا نے کسی طرح کی کوئی تکلیف محسوس نہیں کی تاہم بعد میں دم توڑ دیا‘۔

ابہا جنرل ہسپتال کے طبی عملے نے بچی کی جان بچانے کےلیے ہر ممکن کوشش کی۔ خون کے ٹیسٹ سے پتہ چلا کہ کوبرا کا زہر بچی کے جسم میں تعینات ہو گیا تھا۔

گورنر عسیر شہزادہ ترکی بن طلال نے سعودی بچی کے گھر پہنچ کر سوگوار خاندان سے اظہار تعزیت کیا ہے۔