.
یمن اور حوثی

سعودی عرب میں امریکی سفارت خانہ نے ابھا ہوائی اڈے پرحوثیوں کے حملے کی مذمت کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں امریکی سفارت خانے نے یمن سے حوثی ملیشیا کے نئے حملے کی مذمت کی ہے۔حوثیوں نے نئے ڈرون حملے میں مملکت میں ابھا کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کو نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی۔

سعودی عرب کے فضائی دفاع نظام نے جمعرات کوعلی الصباح حوثیوں کی جانب سے ابھا کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کی طرف داغے گئے بارود سے لدے ڈرون کوروک کر تباہ کردیا ہے۔

عرب اتحاد نے ایک بیان میں کہا ہے کہ تباہ شدہ ڈرون کے ٹکڑے ہوائی اڈے کےآس پاس گرے تھے۔اس حملے میں ہوائی اڈے کے چارملازمین کو’’معمولی چوٹیں‘‘آئی ہیں اوربعض کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے ہیں۔

الریاض میں امریکی سفارت خانہ نے ٹویٹرپرایک بیان میں کہا ہے کہ ’’حوثیوں نے ابھا کے ہوائی اڈے کو دوبارہ نشانہ بنانے کی کوشش کی ہے۔اس حملے کے نتیجے میں چار بے گناہ شہری زخمی ہوئے ہیں۔‘‘

سفارت خانہ نے ٹویٹرپوسٹ میں کہا ہے کہ ’’ہم حوثیوں کی جانب سے شہریوں کے خلاف اس طرح کے مکروہ حملوں کی مذمت کرتے ہیں۔‘‘اس نے اس امید کا اظہارکیا ہے کہ اس ناکام ڈرون حملے میں زخمی ہونے والے افراد جلد صحت یاب ہوں گے۔

سفارت خانے نے ایران کے حمایت یافتہ حوثیوں پر زور دیا ہےکہ وہ تشدد کے بجائے امن پرتوجہ دیں اوراقوام متحدہ کے ساتھ مل کر بحران کے سفارتی حل کے لیے کام کریں۔

حوثی ملیشیا نے ستمبر میں بھی اس ہوائی اڈے کو ڈرون حملے میں نشانہ بنایا تھا۔اس میں آٹھ افراد زخمی ہوگئے تھے اورایک مسافر طیارے کو نقصان پہنچا تھا۔