.

عراق : پارلیمانی انتخابات کے سلسلے میں عسکری اہل کار آج ووٹ ڈال رہے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں آج جمعے کی صبح پارلیمانی انتخابات کے سلسلے میں خصوصی ووٹنگ کا عمل شروع ہو گیا۔ یہ ووٹنگ اتوار کے روز شروع ہونے والی عام ووٹنگ سے 48 گھنٹے قبل ہو رہی ہے۔ اس بات کا اعلان مسلح افواج کے ترجمان میجر جنرل یحیی رسول نے کیا۔

یحیی رسول نے ایک بیان میں واضح کیا ہے کہ "سیکورٹی فورسز سے تعلق رکھنے والے اہل کاروں کو دستوں کی شکل میں پولنگ مراکز منتقل کیا جائے گا"۔ انہوں نے باور کرایا کہ مسلح افواج نے انتخابات کو محفوظ بنانے کے لیے خصوصی سیکورٹی انتظامات کیے ہیں۔

عراقی ہوابازی کے حکام کے مطابق کردستان ریجن سمیت عراق میں تمام ہوائی اڈے کل بروز ہفتہ شام چھ بجے بند کر دیے جائیں گے۔ تمام فضائی کمپنیوں کو آگاہ کر دیا گیا ہے کہ ملک کے ہوائی اڈوں کو پیر کی صبح چھ بجے دوبارہ کھول دیا جائے گا۔

عسکری ووٹرز کے لیے عراق میں 595 پولنگ مراکز بنائے گئے ہیں۔ ان میں 2548 پولنگ بوتھ ہوں گے۔

اس سے قبل جمعرات کے روز عراقی وزیر اعظم مصطفى الكاظمی نے اعلان کیا تھا کہ پارلیمنٹ کی مدت اختتام پذیر ہو گئی ہے۔ اپنی ٹویٹ میں انہوں نے قوم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ "انتخابات نئی پارلیمنٹ کی تشکیل ، وطن کی حفاظت اور ریاست کی تعمیر کے لیے قومی راستہ ہے"۔

الکاظمی نے عراقیوں کے لیے اپنے پیغام میں کہا کہ "آپ نے نمائندے کو پوری آزادی کے ساتھ اور عراق کی قومی اقدار کی بنیاد پر چُنیں ،،، آپ لوگ اپنے ارادے سے تبدیلی کو جنم دیں"۔